Daily Mashriq Quetta Urdu news, Latest Videos Urdu News Pakistan updates, Urdu, blogs, weather Balochistan News, technology news, business news

او آئی سی وزرائے خارجہ اجلاس، مقبوضہ کشمیر سے متعلق قرار داد منظور

0

Get real time updates directly on you device, subscribe now.

نیامی :  نائیجر میں اسلامی تعاون تنظیم (او آئی سی)کے وزرائے خارجہ کونسل کے اجلاس میں مقبوضہ کشمیر سے متعلق قرار داد منظور کرلی گئی،قرارداد میں کہاگیاہے کہ وادی میں بھارتی اقدامات سلامتی کونسل کی قراردادوں کی براہ راست توہین ہیں، وزرائے خارجہ کونسل کے 47ویں اجلاس میں کشمیریوں کی نمائندگی وزیر خارجہ شاہ محمود اورصدرآزادکشمیرمسعودخان نے کی،اجلاس میں شاہ محمود نے مقبوضہ کشمیرکی صورتحال،بھارت کی ریاستی دہشت گردی کواجاگر کیا۔انہوں نے مسئلہ فلسطین ،افغان امن عمل میں پاکستان کے مثبت کردار کا بھی ذکر کیا، پاکستان کی جانب سے مقبوضہ کشمیراوراسلاموفوبیاکے خلاف پیش کی گئیں قراردادیں متفقہ طور پرمنظور کی گئیں،قرارداد کے متن کے مطابق تنازع کشمیر 7 سے زائد دہائیوں سے سلامتی کونسل کے ایجنڈے پر ہے ، بھارت کے 5 اگست 2019 کے اقدامات مسترد کرتے ہیں، بھارتی اقدامات کا مقصد خطے میں آبادی کا تناسب تبدیل کرنا ہے ، ان اقدامات کا مقصد استصواب رائے اور کشمیریوں کے دیگر حقوق چھیننا ہے ۔بھارت سے مطالبہ کیا گیا کہ وہ غیر کشمیریوں کو ڈومیسائل کا اجرا ،جموں و کشمیر تنظیم نو آرڈر 2020 ، جموں و کشمیر گرانٹ آف ڈومیسائل سرٹیفکیٹ رولز 2020 ، جموں وکشمیر لینگوئج بل 2020 اور حق ملکیت کے قوانین میں ترمیم سمیت دیگر یکطرفہ اور غیر قانونی اقدامات فوری کرے ۔او آئی سی نے آر ایس ایس،بی جے پی حکومت کی طرف سے چلائی جانے والی پالیسیوں کو بھی مسترد کیا اور بھارت پر زور دیا کہ وہ متنازعہ علاقے کے موجودہ آبادیاتی ڈھانچے کو تبدیل کرنے سے متعلق کسی بھی اقدام سے باز رہے ، بھارتی رویے ،سانحہ بالاکوٹ، ایل او سی ورکنگ باؤنڈری پر فائرنگ کی بھی مذمت کی گئی۔ قرارداد میں کہا گیا کہ بھارت اقوام متحدہ کے فوجی مبصر گروپ کا کردار ایل او سی پر بڑھائے ، تمام تنازعات عالمی قانون، معاہدات کے مطابق طے کیے جائیں۔عالمی برادری سے قرارداد میں مطالبہ کیا گیا ہے کہ وہ مقبوضہ کشمیر میں صورتحال کی نگرانی کرے ،دنیا پاک بھارت مذاکرات کی جلد بحالی کیلئے کردار ادا کرے ، سیکرٹری جنرل اقوام متحدہ خصوصی ایلچی کا تقرر کریں۔نمائندہ خصوصی مقبوضہ کشمیر میں انسانی حقوق کی خلاف ورزیوں کی نگرانی کرے اور صورت حال سے یواین سیکرٹری جنرل کو آگاہ کرے ۔قرراداد میں انسانی حقوق کمیشن کو کشمیر میں داخل نہ ہونے دینے کی بھارتی اقدام کی مذمت کی گئی، او آئی سی سیکرٹری جنرل سے کشمیر میں بھارتی مظالم پر رپورٹ تیار کرنے کی درخواست کی گئی اورکہا گیا کہ یہ رپورٹ وزرا خارجہ کونسل کے آئندہ اجلاس میں پیش کی جائے ۔اسلامو فوبیا سے متعلق پاکستان کی قرارداد بھی متفقہ منظور کرلی گئی۔قرارداد میں کہاگیاہے کہ اقوام متحدہ اسلاموفوبیا کو جرم قرار دے ۔اجلاس میں فیصلہ کیاگیا کہ وزرائے خارجہ کونسل کا آئندہ اجلاس اگلے سال پاکستان میں ہوگا۔ادھروزیر خارجہ شاہ محمود نے نائیجرکے وزیر اعظم برجی رافینی سے ملاقات کی،جس میں دو طرفہ تعلقات،مقبوضہ جموں و کشمیر کی صورتحال ،اقتصادی و تجارتی تعاون کے فروغ سمیت باہمی دلچسپی کے امور پر تبادلہ خیال کیا گیا۔وزیر خارجہ نے کہا کہ پاکستان اور نائیجر کے مابین دو طرفہ برادرانہ تعلقات ، مذہبی اور تہذیبی ہم آہنگی کی بنیاد پر استوار ہیں۔وزیر خارجہ نے نائیجر میں او آئی سی وزرائے خارجہ کونسل کے اجلاس کی میزبانی اور بہترین انتظامات کرنے پر وزیر اعظم کو مبارکباد پیش کی۔شاہ محمود نے میزبان وزیر اعظم کو بتایا کہ حکومت پاکستان، نائیجر کے سیلاب زدگان کی مدد کیلئے ایک لاکھ بیس ہزار چاولوں کے تھیلے ، خیمے ، ادویات اور کمبل بھجوا رہی ہے جو عنقریب پہنچ جائیں گے ۔وزیر خارجہ نے نائیجر کے باسیوں کو طبی سہولیات کی فراہمی کیلئے ” نائیجر پاکستان صحت کوریڈور بنانے کی پیشکش کی،انہوں نے کہا کہ پاکستان، زراعت، آبپاشی، انفراسٹرکچر ڈویلپمنٹ کے شعبوں میں معاونت جاری رکھے گا۔شاہ محمود نے عمران خان کی طرف سے نائیجر کے وزیر اعظم کو دورہ پاکستان کی دعوت دی جو انہوں نے خوش دلی سے قبول کی۔شاہ محمود نے کویت کے ہم منصب سے بھی ملاقات کی،جس میں دو طرفہ تعاون کے مزید فروغ ، اعلیٰ سطح کے روابط، زراعت، فوڈ سکیورٹی سمیت مختلف شعبوں میں باہمی اشتراک بڑھانے پر اتفاق کیاگیا۔ شاہ محمود نے کہاپاکستان، کویت کے ساتھ اپنے شاندار سیاسی روابط کو ایک مضبوط معاشی شراکت داری میں بدلنے کا خواہاں ہے ، وزیر خارجہ نے مسئلہ کشمیر پر پاکستان کے موقف کی مسلسل حمایت پر کویتی وزیر خارجہ کا شکریہ ادا کیا۔ بعدازاں وزیر خارجہ نے صو مالیہ،نائیجر اور سوڈان کے ہم منصبوں سے بھی ملاقات کی ،او آئی سی اجلاس کے موقع پر شاہ محمود نے امارات کی وزیر مملکت برائے بین الاقوامی ترقی ریم الہاشمی سے ملاقات کی ،جس میں وزیر خارجہ نے ویزے کے حوالے سے پاکستانی شہریوں کو درپیش مشکلات کا معاملہ بھی اٹھایا،خاتون وزیر نے اس مسئلے کو جلد از جلد حل کرنے کی ضرورت پر زور دیا،اماراتی وزیر نے او آئی سی وزرائے خارجہ کے اجلاس میں شاہ محمود کے بیان کو سراہتے ہوئے پاکستان کی جانب سے اسلاموفوبیا کے تدارک کیلئے اسلامی تعاون تنظیم (او آئی سی) کی قرار دادکی تجویز کو سراہا۔

Leave A Reply

Your email address will not be published.