Daily Mashriq Quetta Urdu news, Latest Videos Urdu News Pakistan updates, Urdu, blogs, weather Balochistan News, technology news, business news

ملک کو چلانے کا واحد راستہ آئین کی پاسداری میں ہے: محمود خان اچکزئی 

0

Get real time updates directly on you device, subscribe now.

 

کوئٹہ ( آئی این پی )پشتونخوا ملی عوامی پارٹی کے چیئرمین محمود خان اچکزئی نے کہاہے کہ ہمارے اکابرین اور ہم بے باکی کے سیاست پر یقین رکھتے ہیں ، ملک چلانے کا واحد راستہ آئین کی حکمرانی ، پارلیمنٹ کی بالادستی اور تمام اداروں کو اپنے آئینی حدود میں رہتے ہوئے کام کرنے میں مضمر ہے ،پشتونوں اور بلوچوں کی زمینیں افغانستان میں ہیں ، باڑ لگانے سے آج اپنی ہی لوگوں میں جانے کے لئے پاسپورٹ کا سہارا لینا پڑرہا ہے ۔ ان خیالات کا اظہار انہوں نے کوئٹہ میں پاکستان ڈیموکریٹک موومنٹ کے زیر اہتمام منعقدہ جلسے سے خطاب کرتے ہوئے کیا ۔ محمود خان اچکزئی نے کہا کہ کوئٹہ اور بلوچستان کی عوام نے باہر سے آئے ہوئے مہمانوں کو جو عزت دی اور کامیاب جلسہ کاانعقاد کیا ان پر تمام کارکنوں کومبارکباد پیش کرتاہوں اور دعا کرتاہوں کہ پی ڈی ایم کایہ کارواں رواں دواں رہے ۔آج کارکنوں کی محنت سے مفتی محمود، خان شہید عبدالصمدخان اچکزئی ،خان عبدالغفار خان باچاخان ،غوث بخش بزنجو کے روح کو سکون مل رہا ہوگا ۔ انہوں نے کہاکہ اللہ کے سوا اگر کسی اور کے سامنے کسی شخص کا سر جھک جائے تو وہ مرد نہیں ،ہمارے اور پی ڈی ایم کے اتحاد میں شامل جماعتوں کے کارکنوں کا سر اللہ کے سوا کسی اور کے سامنے نہیں جھکیں گے ،ہم قوم فروش نہیں ہمارے کارکن انسان کو انسان سمجھتے ہیں ،ہم رنگ ،نسل ، زبان اور مسلک کی بنیاد پر کسی سے نفرت نہیں کرتے ، تمام زبانوں کا احترام کرناچاہیے ،پاکستان ایک جمہوری فیڈریشن ہے جہاں تمام اقوام اپنی مادری وطن پر آباد ہیں ، پاکستان میں کوئی ایک دوسرے کا آقا نہیں ہے ، ملک کو چلانے کا واحد راستہ آئین کی پاسداری میں ہے ،ہر ادارے کو اپنے حدود میں رہتے ہوئے کام کرناہوگا، بلوچ سرزمین پر بلوچوں کی حکمرانی اور وہاں کے وسائل پر پہلا حق بلوچوں کا ہوگا،اسی طرح پشتونخوا میں بھی وسائل پر پہلا حق پشتونوں کا ہوناچاہیے ،گزشتہ روز کراچی میں جوکچھ ہواوہ شرمناک اور قابل مذمت ہے میں مزید اس کے تفصیل میں نہیں جانا چاہتا،ایک ماہ قبل ہیلری کلنٹن کی ایک انٹرویو سامنے آئی ہے جس میں پاکستانی سیاست میں اداروں کی مداخلت کے واضح ثبوت کاذکر کیا گیا ہے ، محمود خان اچکزئی نے ہیلری کلنٹن کے انٹرویو کے مختلف حوالے بھی دیئے۔ انہوں نے کہا کہ ذوالقفار علی بھٹو کو بے بنیاد مقدمہ میں پھانسی پر چڑھایاگیا ، عطا اللہ مینگل کے بڑے بیٹے کو قتل کیا گیا جس کا قبر تک معلوم نہیں ، اسفندیار ولی خان پر خودکش حملہ کیا گیا ،ہمیں کمزور نہ سمجھاجائے ایسا نہ ہو کہ ہم یہ فیصلہ کرے کہ ہم نے پاکستان میں الیکشن نہیں لڑنا۔ ہم ان بہادر بچوں ،کارکنوں اور ان کے طاقت پر بھروسہ کرینگے پھر جو کچھ ہوگا وہ دیکھیں گے ۔ انہوں نے کہاکہ قبائل کے لوگ مفت کے سپاہی تھے مگر وزیرستان سے لے کر سوات تک پشتونوں پر جنگ مسلط کی گئی وہاں چیچن ، عرب سمیت مختلف لوگوں کو لایا گیا اور آج وزیرستان کے بہادر لوگ دہشتگردی کے شکار ہیں ،12سو کے قریب قبائلی جرگہ ممبران کو قتل کردیاگیاان تمام تر صورتحال کے باوجود سیاسی جماعتوں کے قائدین اور کارکنوں نے کبھی پاکستان مردہ آباد کا نعرہ نہیں لگایاآج پاکستان کا نظریہ پشتونوں ،سندھیوں ںاور بلوچوں کامقروض ہیں ۔ محمود خان اچکزئی نے کہا کہ باچاخان کے کارکنوں کو اس لئے شہید کیا گیا کہ وہ جمہوری نظام چاہتے تھے ۔ بلوچوں ، پشتونوں ،سندھیوں اور علما کو قتل کرنے کے بعد ہم سے یہ توقع کرنا کہ ہم آپ کے ڈھول پر ناچتے رہیں گے ہم اتنے بے غیرت نہیں بلکہ جس دن ہم نے اپنا ڈھول بجانا شروع کیا اس دن دنیا کے کان پھٹ جائیں گے مگر ہم اس حد تک نہیں جاناچاہتے پاکستان ہمارا مشترکہ ملک ہے ،قائداعظم محمدعلی جناح ملک کے بانی ہے ،گاندھی اورقائداعظم پیدا بھی نہیں ہوئے تھے کہ ہمارے اکابرین انگریزوں کے خلاف لڑ رہے تھے ،ایف سی آر کا پہلے سیاسی قیدی باچاخان تھے ،ہمارے اکابرین اور ہم بے باکی کے سیاست پر یقین رکھتے ہیں ،نواب نووروز خان ایوب خان کے دور میں حقوق کیلئے پہاڑوں پر چڑھ گئے مگر انہیں قرآن کا واسطہ دے کر اتروایا گیا اور پھر انہیں بیٹوں سمیت مچھ جیل میں پھانسی دی گئی ۔ انہوں نے کہا کہ ملک سمیت بلوچستان میں بھی بلوچ پشتون برابر کے شہری ہوں گے دونوں کے حقوق برابر ہونے چاہیے ۔انہوں نے کہاکہ ڈیورنڈ لائن1893 میں کھینچی گئی ،زاہدان سے لیکر قمر الدین تک یہ لائن بلوچ پشتون اقوام کواپنے ہی بھائیوں سے تقسیم کرتی ہے ۔بلوچوں اور پشتونوں کی زمینیں افغانستان میں ہیں ،اب باڑ لگائی گئی کیا ہم اپنی زمینوں کیلئے پاسپورٹ پر جائیں ؟80ہزار لوگ روزانہ کی بنیاد پر افغانستان آتے جاتے تھے اب اپنی زمین پر جانے کیلئے پاسپورٹ کاسہارا لیناپڑرہاہے ۔ ہمیں نہ چھیڑا جائے اور ہمارے لوگوں کو ڈیورنڈ لائن پر آنے جانے کی آزادی ہونی چاہیے ۔

Leave A Reply

Your email address will not be published.