Daily Mashriq Quetta Urdu news, Latest Videos Urdu News Pakistan updates, Urdu, blogs, weather Balochistan News, technology news, business news

تنخواہ زیادہ بڑھانے سے صنعتیں دیگرصوبوں میں منتقل ہوجائیں گی

0

Get real time updates directly on you device, subscribe now.

کراچی ( بزنس رپورٹر ) ایف پی سی سی آئی کے سابق سینئر نائب صدر اور یونائیٹڈ بزنس گروپ پاکستان (یوبی جی)کے سیکریٹری انفارمیشن ڈاکٹر مرزا اختیار بیگ نے سندھ کے بجٹ میں کم از کم اجرت 25,000 روپے کے معاملے پر وزیر محنت سعید غنی سے میٹنگ کی جس میں انہوں نے بتایا کہ سندھ میں کم از کم اجرت 17,500 روپے سے بڑھاکر 25,000 روپے ماہانہ جو 43 فیصد بنتا ہے ، صنعت کیلئے ناقابل برداشت ہے اوراس پر صنعتکاروں کے تحفظات ہیں۔ وفاقی حکومت اور پنجاب حکومت نے کم از کم اجرت 20,000 روپے جبکہ خیبرپختونخوا حکومت نے 21,000 روپے ماہانہ کا اعلان کیا ہے ۔ڈاکٹر بیگ کے مطابق اجرتوں میں اتنے زیادہ فرق سے صوبوں میں صنعتوں کی مقابلاتی سکت متاثر ہوگی جس کی وجہ سے صنعتیں بند یا دوسرے صوبوں کو منتقل ہوسکتی ہیں، جو سندھ میں بیروزگاری کا سبب بنے گا۔ ڈاکٹر بیگ نے بنگلہ دیش اور پاکستان میں کم از کم اجرتوں کا موازنہ کرتے ہوئے بتایا کہ بنگلہ دیش میں کم از کم اجرتیں 130 ڈالر ماہانہ اور پاکستان میں وفاق میں نئی اجرتیں 214 ڈالر جبکہ سندھ میں اجرتیں 266 ڈالر ماہانہ ہوگئی ہیں، جو پیداواری لاگت میں اضافہ کرے گی۔ وزیر محنت سعید غنی نے ڈاکٹر بیگ کو یقین دلایا کہ وہ اس اہم مسئلے پر وزیراعلیٰ سندھ سے بات کرکے باہمی رضامندی سے اس کا حل نکالیں گے ۔ وزیر محنت کے ساتھ میٹنگ میں ایس ایم منیر، زبیر طفیل، ظفر بختاوری، خالد تواب، سمیع خان، اشتیاق بیگ، عمر ریحان، سلیم الزماں، یاسین ملک، گلزار فیروز، شکیل ڈھینگرا، طارق حلیم اور دیگر بزنس مین موجود تھے۔

Leave A Reply

Your email address will not be published.