Daily Mashriq Quetta Urdu news, Latest Videos Urdu News Pakistan updates, Urdu, blogs, weather Balochistan News, technology news, business news

دوحہ : افغان مزاکرات بے نتیجہ ختم , اگلے ہفتے پھر بات چیت پر اتفاق

0

Get real time updates directly on you device, subscribe now.

کابل، دوحہ :   افغان طالبان کے سربراہ ملا ہیبت اللہ اخونزادہ نے کہا کہ ہم افغان تنازع کا سیاسی حل چاہتے ہیں ۔ ہم بات چیت کیلئے پرعزم ہیں لیکن دوسرے فریق وقت ضائع کر رہے ہیں، افغانستان کو بچانے کیلئے غیر ملکیوں پر انحصار نہیں کرنا چاہیے ۔ ملک میں موجود سفارت کاروں اور غیرسرکاری اداروں کو یقین دلاتے ہیں کہ ہماری طرف سے ان کو کسی قسم کا مسئلہ نہیں ہوگا۔ عید الاضحی کے لیے جاری اپنے بیان میں طالبان سربراہ ملا ہیبت اللہ اخونزادہ نے کہا ہے کہ غیر ملکیوں پر انحصار کرنے کے بجائے افغان اپنے مسائل خود حل کریں اور ملک کو موجودہ صورتحال سے نکالیں، امریکا سمیت عالمی برادری کے ساتھ سفارتی، اقتصادی اور سیاسی تعلقات چاہتے ہیں۔افغانستان میں قیام امن اور سلامتی کے ہر موقع سے فائدہ اٹھائیں گے ۔ ملک میں موجود سفارت کاروں، سفارت خانوں، قونصل خانوں، سرمایہ کاروں اور غیرسرکاری اداروں کو اس بات کایقین دلاتے ہیں کہ ہماری طرف سے ان کو کسی قسم کا مسئلہ نہیں ہوگا وہ محفوظ ہیں ۔ پڑوسیوں اور خطے کے دیگر ممالک کو یقین دلاتے ہیں کہ افواج کے انخلا کے بعد ہماری طرف سے کوئی مسئلہ نہیں ہو گا۔ اپنی سرزمین کو کسی کے خلاف استعمال ہونے کی اجازت نہیں دیں گے ۔ دیگر ممالک سے بھی مطالبہ ہے کہ ہمارے اندرونی معاملات میں مداخلت نہ کریں۔ تمام ملکی فریقین کے لیے دروازے کھلے ہیں اور ہم کسی سے دشمنی نہیں چاہتے ۔ افغانستان ہم سب کا مشترکہ گھر ہے ۔دوسری جانب دوحہ میں افغان حکومت اور طالبان کے درمیان مذاکرات کسی نتیجے کے بغیر ختم ہوگئے ،خبرایجنسی کے مطابق افغان حکومت اور طالبان کی جانب سے مشترکہ بیان جاری کیا گیا ہے جس میں کہا گیا ہے کہ مسئلے کے حتمی حل تک پہنچنا ضروری ہے جبکہ آئندہ ہفتے دوبارہ مذاکرات پر بھی اتفاق کیا گیا ہے ۔ مذاکرات کے قطری سہولت کار مطلق ال قحطانی نے اپنے بیان میں کہا ہے کہ دونوں فریقین میں د وسرے روز کے اختتام تک شہریوں کی ہلاکتوں سے بچنے اور عوام کی جانوں کی حفاظت کرنے پر اتفاق ہوا۔ اس کے علاوہ امن معاہدے تک اعلیٰ سطح پر مذاکرات جاری رکھنے پر اتفاق کیا ہے اور اگلے ہفتے پر مذاکرات ہونگے ۔ علاوہ ازیں سابق افغان وزیراعظم گلبدین حکمت یار نے کہا ہے کہ افغان حکومت نے کچھ اضلاع جان بوجھ کر طالبان کے حوالے کئے تاکہ نیٹو افواج انخلا کا فیصلہ واپس لے لیں۔ ادھر دوحہ( قطر) میں بین الافغان مذاکرات دوسرے روز بھی جاری رہے ۔ افغان حکومت اور طالبان کی طرف سے سات سات نمائندوں نے اس میں شرکت کی، اور مصالحتی عمل پر تبادلہ خیال کیا۔ دوسری جانب جنوبی افغانستان کے صوبہ قند ھار میں افغان فورسز اور طالبان کے مابین جھڑپوں اور بم دھماکے میں خواتین اور بچوں سمیت 8 افغان شہری جاں بحق اور 38 زخمی ہوگئے ۔ افغان میڈیا کے مطابق اتوار کی صبح ضلع ارغستان میں سڑک کنارے نصب بم اس وقت دھماکا سے پھٹ گیا جب ایک گاڑی اس سے ٹکرا گئی جس کے نتیجے میں خاتون اور بچے سمیت 3 افغان شہری موقع پر جاں بحق اور 12 زخمی ہوگئے ۔ جبکہ 5 افغان شہری جھڑپوں کے دوران فائرنگ کی زد میں آکر ہلاک اور 26 زخمی ہوگئے ۔

Leave A Reply

Your email address will not be published.