Daily Mashriq Quetta Urdu news, Latest Videos Urdu News Pakistan updates, Urdu, blogs, weather Balochistan News, technology news, business news

ساتویں این ایف سی ایوارڈ کے تحت بلوچستان کو16سو بلین روپے ملے ہیں، وزیر خزانہ بلوچستان 

0

Get real time updates directly on you device, subscribe now.

 

کوئٹہ /اسلام آباد(آن لائن )صوبائی وزیر خزانہ میر ظہور احمد بلیدی نے کہاہے کہ ساتویں این ایف سی ایوارڈ کے تحت 10سالوں میں بلوچستان کو16سو بلین روپے ملے ہیں جن میں 450بلین روپے ترقیاتی اسکیمات پر خرچ ہوئے ہیں ،جن میں 15ہزار کلو میٹر روڈز کی تعمیر،268ڈیمز، 15سو پرائمری سکولز ،5ہسپتال ،محکمہ تعلیم میں24ہزار آسامیاں ،19ہزار آسامیاں صحت کے شعبے جبکہ پولیس اور لیویز کے محکموں کے 29ہزار آسامیاں شامل ہیں250بلین روپے لاءاینڈرآرڈر پر خرچ ہوئے ہیں روزگار کی فراہمی ہماری حکومت کی اولین ترجیح ہے جس طرح حلقے میں بنیادی سہولتوں کی فراہمی کے لیے کوشاں رہے ہیں اگر بلوچستان کو دیگر صوبوں کے برابر لانے کیلئے ترقی دینی ہے تو اس کو 25فیصد حصہ ملناچاہےے ہماری امید ہے کہ وفاق اور دیگر صوبے بلوچستان کی محرومیوں کومدنظررکھیںگے ۔ان خیالات کااظہار انہوں نے گزشتہ روز میڈیا سے بات چیت کرتے ہوئے کیا۔ میرظہوراحمدبلیدی نے کہاکہ 7ویں این ایف سی ایوارڈ کے بعد 2010ءسے اب تک بلوچستان کو 1604بلین روپے ملے ہیں جس میں 450بلین روپے ترقیاتی منصوبوں پر خرچ ہوئے ہیں جن میں 15ہزار کلو میٹر روڈز کی تعمیر،268ڈیمز، 15سو پرائمری سکولز ،5ہسپتال ،محکمہ تعلیم میں24ہزار آسامیاں ،19ہزار آسامیاں صحت کے شعبے جبکہ پولیس اور لیویز کے محکموں کے 29ہزار آسامیاں شامل ہیں ،انہوں نے کہاکہ روزگار کی فراہمی ہماری حکومت کی اولین ترجیح ہے جس طرح حلقے میں بنیادی سہولتوں کی فراہمی کے لیے کوشاں رہے ہیں اسی طرح پڑھے لکھے نوجوانوں کو روزگار کی فراہمی کے لیے بھی حکمت عملی بنائیں گے ،معذور افراد بھی ہمارے معاشرے کا حصہ ہیں ان کو با عزت روزگار دینا ہماری ذمہ داری ہے ، انشاللہ معزوروں کے کوٹے کو ہر محکمے میں یقینی بنائیں گے۔وفاقی حکومت کو بلوچستان کے مسائل ،چیلنجز اور رقبہ بہتر معلوم ہے این ایف سی ایوارڈ سمیت دیگر کے حوالے سے ہم نے اپنا ورک کرلیاہے جیسے ہی معاملات آگے بڑھیںگے ہم اپنے مسائل ،چیلنجز اور مطالبات سامنے رکھیںگے ،ساتویں این ایف سی ایوارڈ سے بلوچستان نے امن وامان کی صورتحال پر اب تک 250بلین روپے خرچ کئے ہیں بلوچستان کو دہشتگردی کاسامناہے فاٹا کے مسائل سے بھی واقف ہیں انہیں بھی بلوچستان طرز پر مسائل کا سامناہے جس طرح فاٹا کیلئے ہمدردی ہے ہمیں توقع ہے کہ بلوچستان کیلئے بھی ہمدردی ہوں وسائل ہمارے ملک ہیں اور ہمیشہ سے برابر تقسیم کرتے رہے ہیں اور ہم دوسرے صوبوں سے ایک مثبت سوچ کی توقع رکھتے ہیں انہوں نے کہاکہ بلوچستان پاکستان کا 44فیصد اورسب سے زیادہ محروم رہنے والا صوبہ ہے ہمارا حصہ 9.09فیصد بن رہاہے اس میں ہم کس کو کتنا دیں اگر بلوچستان کو دیگر صوبوں کے برابر لانے کیلئے ترقی دینی ہے تو اس کو 25فیصد حصہ ملناچاہےے ہماری امید ہے کہ وفاق اور دیگر صوبے بلوچستان کی محرومیوں کومدنظررکھیںگے ۔

Leave A Reply

Your email address will not be published.