Daily Mashriq Quetta Urdu news, Latest Videos Urdu News Pakistan updates, Urdu, blogs, weather Balochistan News, technology news, business news

امریکا نے ساڑھے 9 ارب ڈالر کے افغان ذخائر منجمد کردیے

0

Get real time updates directly on you device, subscribe now.

امریکا کی جو بائیڈن انتظامیہ نے کابل پر طالبان کے قبضے کے بعد امریکی بینکوں میں موجود افغان حکومت کے 9 ارب 50 کروڑ ڈالر کے ذخائر منجمد کردیے۔

اخبار کا کہنا تھا کہ امریکی سیکریٹری خزانہ جینیٹ یلین اور محکمہ خزانہ کے فارن ایسیٹس کنٹرول آفس کے عہدیداروں نے اکاؤنٹس منجمد کرنے کا فیصلہ کیا۔

ایک حکومتی عہدیدار نے اخبار سے بات کرتے ہوئے کہا کہ ‘امریکا میں افغان حکومت کا مرکزی بینک کا کوئی بھی اثاثہ طالبان کے لیے دستیاب نہیں ہوگا’۔

 

رپورٹ کے مطابق اس اقدام سے قبل وائٹ ہاؤس کی طرح امریکی اسٹیٹ ڈپارٹمنٹ سے مشاورت کی گئی اور بائیڈن انتظامیہ طالبان پر دباؤ ڈالنے کے لیے دیگر اقدامات پر بھی غور کررہی ہے۔

ساتھ ہی یہ نشاندہی بھی کی گئی کہ بائیڈن حکومت کو مذکورہ ذخائر منجمد کرنے کے لیے کسی نئے اجازت نامے کی ضرورت نہیں تھی کیوں کہ 11 ستمبر 2001 کے دہشت گرد حملوں کے بعد جاری کردہ ایک صدارتی حکم نامے کے تحت طالبان پہلے ہی پابندی کی زد میں ہیں۔

واشنگٹن نے طالبان کی حکومت کو پیسے تک رسائی سے روکنے کی کوشش کے طور پر کابل کو نقد کی ترسیل بھی روک دی۔

‘دا افغانستان بینک’ کے قائم مقام سربراہ نے ایک ٹوئٹ میں بتایا تھا کہ ڈالرز کی ترسیل رک جائے گی کیوں کہ واشنگٹن طالبان کو فنڈز تک رسائی نہیں دے گا۔

 

بلوم برگ کے مطابق افغانستان کے مرکزی بینک کے ساڑھے 9 ارب ڈالر کے ذخائر ہیں جس میں سے ایک اچھا خاصہ حصہ نیویارک فیڈرل ریزروز اور امریکی مالیاتی اداروں کے اکاؤنٹس میں موجود ہے۔

مذکورہ پابندی طالبان کی جانب سے افغانستان پر مکمل قبضے کے پیشِ نظر عمل میں آئی ہے۔

افغانستان کی کرنسی ‘افغانی’ کو طالبان کے قبضے کے بعد پہلے ورکنگ ڈے پیر سے سخت گراوٹ کا سامنا ہے۔

بلوم برگ کے اکٹھے کیے گئے  مسلسل چوتھے روز قدر میں کمی کے بعد منگل کے روز افغانی 4.6 فیصد گر کر فی ڈالر 86.0625 کی سطح پر پہنچ گئی۔

Leave A Reply

Your email address will not be published.