Daily Mashriq Quetta Urdu news, Latest Videos Urdu News Pakistan updates, Urdu, blogs, weather Balochistan News, technology news, business news

واٹس ایپ کی نئی پالیسی سے مخالف ایپس کو کتنا فائدہ ہوا؟

0

Get real time updates directly on you device, subscribe now.

واٹس ایپ کی نئی پرائیویسی پالیسی کا اطلاق 15 مئی سے ہوچکا ہے۔

یہاں تک کہ ان کے لیے وہ واٹس ایپ میں کوئی بھی میسج، کال یا نوٹیفکیشن بھیج یا موصول نہیں کرسکیں گے اور پھر بھی پالیسی قبول نہ کرنے پر 4 ماہ بعد ان کا اکاؤنٹ بھی ڈیلیٹ ہوسکتا ہے۔

جنوری 2021 میں واٹس ایپ کی جانب سے پرائیویسی پالیسی میں تبدیلیوں کا اعلان کیا گیا تھا اور ان کو قبول نہ کرنے پر سخت اقدامات کا بتایا گیا تھا۔

اس کے بعد سے واٹس ایپ صارفین کی جانب سے دیگر میسجنگ ایپس کی جانب سے رخ کیا جارہا ہے۔

ایپ اینالیٹکس کمپنی سنسر ٹاور کے ڈیٹا کے مطاب بظاہر پالیسی کے مخالف واٹس ایپ صارفین 2 ایپس سگنل اور ٹیلیگرام کا رخ کررہے ہیں۔

ڈیٹا کے مطابق جنوری سے اپریل 2021 کے دوران عالمی سطح پر سگنل ایپ کو ڈاؤن لوڈ کرنے کی شرح میں گزشتہ سال کے اسی عرصے کے مقابلے میں 1192 فیصد زیادہ تھی اور 6 کروڑ 46 لاکھ سے زیادہ بار ڈاؤن لوڈ کیا گیا۔

اسی عرصے کے دوران ٹیلیگرام کو انسٹال کرنے کی تعداد گزشتہ سال کی اسی مدت کے مقابلے میں 98 فیصد اضافے سے 16 کروڑ سے زیادہ رہی۔

اس کے مقابلے میں جنوری سے اپریل 2021 کے دوران واٹس ایپ انسٹال کرنے کی شرح میں گزشتہ سال کے اسی عرصے کے مقابلے میں 43 فیصد کمی دیکھنے میں آئی۔

یہ تینوں ایپس یعنی واٹس ایپ، ٹیلیگرام اور سگنل لگ بھگ ایک جیسی ہی ہیں۔

ان تینوں میں کال، ویڈیو چیٹ اور ٹیکسٹ میسجز دنیا بھر میں مفت بھیجے جاسکتے ہیں۔

تینوں ایپس کراس پلیٹ فارم ہیں اور انکرپشن کی سہولت فراہم کرتی ہیں۔

تینوں میں بنیادی فرق صارفین سے متعلقق ڈیٹا اکٹھا کرنے سے متعلق ہے۔

جنوری 2021 میں ایک ٹوئٹر صارف نے ایک چارٹ میں بتایا تھا کہ سگنل، ٹیلیگرام، واٹس ایپ، آئی میسج اور فیس بک میسنجر صارفین متعلق کتنا ڈیٹا اکٹھی کرتی ہیں۔

Leave A Reply

Your email address will not be published.