Daily Mashriq Quetta Urdu news, Latest Videos Urdu News Pakistan updates, Urdu, blogs, weather Balochistan News, technology news, business news

الیکشن کمیشن کا فواد چوہدری، اعظم سواتی سے ثبوت مانگنے کا فیصلہ

0

Get real time updates directly on you device, subscribe now.

الیکشن کمیشن آف پاکستان (ای سی پی) نے پاکستان تحریک انصاف کے دو وفاقی وزرا، وفاقی وزیر ریلوے اعظم سواتی اور وفاقی وزیر اطلاعات فواد چوہدری کی جانب سے الیکشن کمیشن پر لگائے گئے الزامات کو مسترد کر دیا ہے اور ان سے اس ضمن میں ثبوت مانگنے کا فیصلہ کیا ہے۔

اس بات کا فیصلہ منگل کے روز چیف الیکشن کمشنر سکندر سلطان راجہ کی سربراہی میں ہونے والے الیکشن کمیشن کے اجلاس میں کیا گیا۔

آئینی ماہرین کا کہنا ہے کہ اگر وزرا ثبوت فراہم کرنے میں ناکام رہے تو پھر الیکشن کمیشن کے پاس ان کے خلاف توہین عدالت کی کارروائی کرنے کا اختیار حاصل ہے۔

اجلاس میں وفاقی وزرا کی طرف سے الیکشن کمیشن اور چیف الیکشن کمشنر پر لگائے گئے الزامات کو نہ صرف زیر بحث لایا گیا بلکہ ان الزامات کی پرزور الفاظ میں تردید کی گئی۔

الیکشن کمیشن اور وفاقی حکومت کے درمیان اختلاف کی سب سے بڑی وجہ آئندہ انتخابات میں الیکٹرانک ووٹنگ مشین (ای وی ایم) کے استعمال کا معاملہ ہے۔

وفاقی حکومت الیکٹرانک ووٹنگ مشین کے استعمال کے حق میں ہے اور اس کے لیے حکومت نے بجٹ میں رقم بھی مختص کر رکھی ہے۔

جبکہ الیکشن کمیشن نے عام انتخابات میں اس ووٹنگ مشین کے استعمال پر اپنے تحفظات کا اظہار کرتے ہوئے کہا کہ ای وی ایم کے استعمال سے بھی الیکشن شفاف ہونے کی کوئی ضمانت نہیں دی جاسکتی کیونکہ اس مشین کے سافٹ وئیر میں کسی بھی وقت تبدیلی لائی جاسکتی ہے۔

الیکشن کمیشن نے اس ضمن میں الیکٹرانک ووٹنگ مشین کے بارے میں 37 اعتراضات پر مبنی نوٹ سینیٹ میں پارلیمانی امور کی قائمہ کمیٹی کو بھجوایا تھا۔

قائمہ کمیٹی کے اجلاس کے دوران وفاقی وزیر برائے ریلوے اعظم سواتی نے الیکشن کمیشن پر پیسے لینے اور غیر شفاف انتخابات کروانے کے الزامات بھی لگائے تھے۔ وفاقی وزیر نے یہاں تک کہا تھا کہ ایسے ادارے کو آگ لگا دینی چاہیے۔

ای سی پی ذرائع کے مطابق مذکورہ وفاقی وزیر نے ایوان صدر میں ہونے والی ایک تقریب میں بھی الیکشن کمیشن کے حکام کی موجودگی میں ای سی پی پر اسی طرح کے سنگین الزامات لگائے تھے۔

منگل کو ہونے والے اجلاس کے بعد الیکشن کمیشن کی جانب سے جاری ہونے والی پریس ریلیز میں کہا گیا ہے کہ جن افراد نے اس ادارے پر الزامات عائد کیے ہیں وہ ثبوت بھی پیش کریں، تاہم اس پریس ریلیز میں یہ واضح نہیں کیا گیا کہ وفاقی وزرا کب تک ان الزامات کے ثبوت پیش کریں۔

الیکشن کمیشن نے پاکستان الیکٹرانک میڈیا ریگولیٹری اتھارٹی یعنی پیمرا سے ایوان صدر میں ہونے والی تقریب کے علاوہ وفاقی وزیر فواد چوہدری اور اعظم سواتی کی پریس کانفرنس اور پارلیمانی امور سے متعلق سینیٹ کی قائمہ کمیٹی میں ہونے والی تمام کارروائی کا تمام ریکارڈ طلب کرلیا ہے۔

خیال رہے کہ وفاقی وزیر اطلاعات فواد چوہدری نے گذشتہ ہفتے ایک پریس کانفرنس میں چیف الیکشن کمشنر کو اپوزیشن کا ‘ترجمان’ اور ‘آلہ کار’ قرار دیتے ہوئے کہا تھا کہ ‘چیف الیکشن کمشنر اگر سیاست کرنا چاہتے ہیں تو میں انھیں دعوت دیتا ہوں وہ عہدہ چھوڑیں اور الیکشن لڑیں۔’

Leave A Reply

Your email address will not be published.