Daily Mashriq Quetta Urdu news, Latest Videos Urdu News Pakistan updates, Urdu, blogs, weather Balochistan News, technology news, business news

غذاؤں کے ذریعے سردرد کا علاج

0

سردرد…ایک ایسی طبی پریشانی، جس کا تعلق عمر سے ہے نہ صنف سے، لیکن عصر حاضر میں اس عارضہ میں مبتلا افراد کی تعداد میں تشویشناک حد تک اضافہ ہو چکا ہے۔

ورلڈ ہیلتھ آرگنائزیشن کے مطابق سردرد اعصابی نظام کی سب سے عام بیماری ہے، جس نے کل آبادی کے 50 فیصد مرد و خواتین کو متاثر کیا۔ اس حوالے سے اب تک کی مستند ترین تحقیقات میں سے ایک نارویجن یونیورسٹی آف سائنس اینڈ ٹیکنالوجی، ناروے نے کی ہے۔

اس جامعہ کی خصوصی ٹیم نے 1961ء سے 2020ء تک 357 تحقیقاتی اشاعت کا مطالعہ کیا اور پھر اپنی تحقیق کی روشنی میں یہ نتائج دیئے کہ دنیا کی کل آبادی کے 52 فیصد لوگ ہر سال سردرد کے مسئلہ سے دوچار ہوتے ہیں اور 15.8 فیصد لوگ روزانہ کی بنیاد پر سردرد کی شکایت کرتے نظر آتے ہیں، جن میں نصف تعداد درد شقیقہ کی ہے۔

ڈپریشن، بلڈ پریشر اور کسی بھی قسم کا جسمانی خلل سردرد کی عمومی وجوہات ہیں۔ زیادہ تر معاملات میں سردرد بے ضرر ہوتا ہے لیکن مستقل رہنے سے بعض اوقات یہ فالج اور خون کی کمی جیسی خطرناک بیماریوں کا بھی موجب بن سکتا ہے۔ سردرد کے علاج کے لئے آج مارکیٹ میں سینکڑوں ہزاروں ناموں سے ادویات موجود ہیں، جن پر لوگ سالانہ اربوں روپے خرچ کردیتے ہیں۔

ان ادویات کے استعمال سے ہو سکتا ہے عارضی طور پر آپ کو آرام تو محسوس ہو لیکن کیا آپ کو معلوم ہے ان ادویات کے متعدد سائیڈ افیکٹس یعنی مضر اثرات ہیں، جن سے آپ دیگر طبی مسائل کا شکار ہو سکتے ہیں۔ لہذا یہاں ہم آپ کو ایسی غذاؤں کے بارے میں بتانے جا رہے ہیں، جن کے استعمال سے آپ کو بغیر کسی سائیڈ افیکٹ کے سردرد سے نجات حاصل ہو سکتی ہے۔

تربوز

غذاؤں کے ذریعے سردرد کے علاج میں تربوز کو پہلا نمبر حاصل ہے کیوں کہ یہ نہ صرف پوٹاشیم اور میگنیشیم سے بھرپور ہوتا ہے بلکہ اس میں 90 فیصد پانی ہوتا ہے اور جسم میں پانی کی کمی سردرد کی سب سے عام وجہ بیان کی جاتی ہے۔ لہذا سردرد کے علاج میں تربوز کو بہت زیادہ اہمیت حاصل ہے۔ تاہم ضروری امر یہ ہے کہ ہمیشہ تازہ تربوز حاصل کرنے کی کوشش کریں کیوں کہ تربوز جتنا تازہ ہو گا، اس میں پانی کی مقدار اتنی ہی زیادہ ہو گی۔

آلو

افادیت کے اعتبار سے آلو کی اہمیت سے انکار نہیں کیا جا سکتا اور سردرد میں تو یہ مزید موثر ہو جاتا ہے، خصوصاً ایسے افراد کے لئے تو یہ بہت ہی فائدہ مند چیز ہے، جو ممنوعہ مشروبات کے عادی ہیں کیوں کہ ان مشروبات کے استعمال سے جسم میں پانی اور پوٹاشیم کی کمی واقع ہو جاتی ہے۔ جسم میں پانی اور پوٹاشیم کی کمی سردرد کی ایک اہم وجہ ہے اور آلو کو یہ خصوصیت حاصل ہے کہ یہ پانی اور پوٹاشیم سے بھرپور ہوتا ہے، لہذا جب بھی آپ پانی یا پوٹاشیم کی کمی کے باعث سردرد کا شکار ہوں تو فوری طور پر ابلے ہوئے آلو کا استعمال کریں، جو آپ کو صحت یابی کی طرف گامزن کر دے گا۔

بادام

بادام ایسے وٹامنز اور منرلز سے بھرپور ہوتا ہے، جو آپ کی صحت کے لئے نہایت مفید تصور کئے جاتے ہیں اور یہی اجزاء آپ کو سردرد کی پریشانی سے بھی بچاتے ہیں۔ بادام میگنیشیم سے بھرا ہوتا ہے، جو اعصاب اور پٹھوں کے تناؤ کو کم اور بلڈ پریشر کو کنٹرول کرنے میں نہایت مددگار ثابت ہوا ہے، ہائی بلڈ پریشر سردرد اور درد شقیقہ کا باعث بن سکتا ہے، لہذا اپنی خوراک میں میگنیشیم سے بھرپور غذائیں جیسے بادام وغیرہ کے استعمال کو بڑھائیں تاکہ آپ سردرد اور دیگر بیماریوں سے محفوظ رہ سکیں۔ میگنیشیم کے ساتھ بادام میں سلیسن نامی مرکب بھی پایا جاتا ہے، جو جسم میں اسپرین کے طور پر کام کرتا ہے، ماہرین کے مطابق ڈاکٹر کے مشورے سے روزانہ 10 سے 15 بادام آپ کو سردرد سمیت چند دیگر پریشانیوں سے بچا سکتے ہیں۔

مچھلی

مچھلی ایک اور ایسی غذا ہے، جس کا وقفے وقفے سے استعمال آپ کو درد سر کی شکایت سے نجات دلا سکتا ہے۔ مچھلی خصوصاً سرمئی رنگ کی مچھلی (میکریل) اور سالمن اومیگا تھری فیٹس، اینٹی سوزش اور اعصابی نظام کی حفاظت کرنے والے اجزاء سے بھرپور ہوتی ہے۔ سرمئی رنگ کی مچھلی کا استعمال ایسے لوگوں کے لئے نہایت مفید ہے،جو درد شقیقہ کا شکار ہیں۔ اسی طرح سالمن میں اومیگا تھری سمیت چند ایسے اجزاء شامل ہوتے ہیں، جو دماغ کے کام کرنے کی صلاحیت کو بڑھاوا دیتے ہیں۔ لہذا اگر آپ کو مچھلی پسند نہیں بھی ہے تو پھر بھی کسی دوسرے غذا جیسے انڈے وغیرہ کے ساتھ ملا کر ہفتے میں ایک بار اسے ضرور کھائیں۔

روزمیری (خوشبودار جھاڑی) کا تیل

کیا آپ نے کبھی گھریلو ٹوٹکوں میں روزمیری کا تیل استعمال کیا ہے؟ نہیں کیا تو اس کی عادت ڈالیں کیوں کہ یہ ایک ایسی خوشبودار جھاڑی ہے، جو دردشقیقہ، ہارمونز کے عدم توازن سے پیدا ہونے والے سردرد اور ذہنی تناؤ میں نہایت مفید تصور کی جاتی ہے۔ انسان اس جڑی بوٹی کو سینکڑوں سال سے ذہنی تندرستی اور قوت کے لئے استعمال کرتا آیا ہے۔ روزمیری کی ان خصوصیات کی وجہ اس میں اینٹی سوزش جزو اور درد میں کمی کے لئے پائی جانے والی دیگر خصوصیات ہیں۔ اس کا استعمال نیند میں بہتری اور پٹھوں کے تناؤ کو آرام دیتا ہے۔ روزمیری کے استعمال کا بہترین طریقہ یہ ہے کہ اس کے چند قطرے بادام یا ناریل کے تیل میں شامل کرکے آہستگی سے کانوں کے پچھلے حصے اور ماتھے پر مساج کریں یا پھر گرم پانی میں روزمیری تیل کے چند قطرے ڈال کر اس سے نہائیں۔

کھمبی

کیا آپ جانتے ہیں کہ بعض اوقات آنتوں کے مسائل سردرد کا سبب بن سکتے ہیں؟ اگر درد شقیقہ کی وجہ سے معدہ خراب ہوتا ہے  تو دوسری طرف خراب معدے یا آنتوں کی وجہ سے سر درد بھی ہوتا ہے تو ایسی صورت میں آپ کا جسم غذا کو پوری طرح سے ہضم نہیں کر پاتا اور نتیجتاً سردرد سمیت دیگر طبی مسائل پیدا ہوتے ہیں۔ تو اس صورت حال سے بچنے کا ایک طریقہ یہ ہے کہ آپ ایسی غذائیں کھائیں جن میں ریبوفلاون زیادہ ہو، ریبوفلاون ایک ایسا وٹامن ہے جو میٹابولک نظام کی بہتری کے لئے نہایت فائدہ مند ہے یعنی یہ ہضم کرنے کی صلاحیت کو بڑھاتا ہے اور مشروم یعنی کھمبی انہی غذاؤں میں سے ایک ہے، جو ریبوفلاون سے بھرپور ہے۔ مختلف تحقیقات یہ بتاتی ہیں کہ ریبوفلاون درد شقیقہ کے علاج میں نہایت موثر ہے۔ لہذا ناشتے یا دوپہر کے کھانے میں مشروم کو سلاد کے طور پر استعمال کریں تاکہ آپ کو درد سر سے مستقل نجات مل سکے۔

کیلا

اگر آپ سردرد سے نجات یا اس درد کو مزید بڑھنے سے روکنا چاہتے ہیں تو فوری طور پر کیلے کی طرف رجحان کریں کیوں کہ کیلا پوٹاشیم اور میگنیشیم سے بھرپور ہوتا ہے۔ جسم میں پوٹاشیم کی کم مقدار ہائی بلڈ پریشر اور بلڈ شوگر کا سبب بن سکتی ہے، جس سے پھر سر میں شدید درد بھی رہتا ہے۔ کیلے میں 74 فیصد پانی ہوتا ہے، لہذا کیلا کھانے سے تمام مذکورہ کمیوں کو دور کیا جا سکتا ہے۔

لال مرچ

اگر آپ مسالے دار غذائیںکھانے کے شوقین ہیں تو آپ کو سر کے درد کا یہ علاج پسند آئے گا۔ سر درد کے علاج میں لال مرچ کیسے کام آسکتی ہے تو اس کا طریقہ یہ ہے کہ نصف کپ گرم پانی میں چائے کے چمچ کا ایک چوتھائی حصہ سرخ مرچ ڈال کر اسے اچھی طرح مکس کر لیں، پھر تھوڑی سے کاٹن یعنی روئی کو اس پانی میں کچھ اس طرح ڈبوئیں کہ وہ اچھی طرح جذب کر لے، پھر اس کاٹن کو اپنی ناک کے نتھنوں میں آہستگی سے رگڑیں، اگرچہ ایسا کرنے سے آپ کو اچھا محسوس نہیں ہوگا لیکن مختلف سائنسی تحقیقات بتاتی ہیں کہ اس عمل کے بعد آپ 40 روز تک سردرد کی علامات کو خود سے دور رکھ سکتے ہیں۔

ادرک

ایشیائی ممالک میں ادرک کا کھانوں میں استعمال عام ہے، جس کی وجہ بلاشبہ ادرک کی افادیت ہے، ویسے تو ادرک کے متعدد فوائد ہیں لیکن ان میں سے ایک سردرد کا علاج بھی ہے۔ اس میں قدرتی طور پر ایسے کیمیکل مرکبات پائے جاتے ہیں جو سر میں جانے والی خون کی شریانوں کی سوجن کو کم کرکے سردرد سے نجات دیتے ہیں۔ ادرک جسم میں سیروٹونن کی سطح کو بڑھاتا ہے، جو خون کی نالیوں کے لئے نہایت مفید تصور کیا جاتا ہے۔ کھانوں کے ساتھ ادرک کی چائے بنا کر پینے سے بھی سردرد سمیت دیگر طبی مسائل سے نجات حاصل کی جا سکتی ہے یا کم از کم ان میں کافی حد تک ریلیف مل سکتا ہے۔

پالک

پالک کے ذائقے کو آپ پسند کریں یا ناپسند لیکن اس حقیقت سے انکار نہیں کیا جا سکتا کہ یہ سبز پتوں والی سبزی انسانی جسم کے لئے نہایت مفید ہے۔ پالک میں میگنیشیم اور فولک ایسڈ اچھی خاصی مقدار میں پایا جاتا ہے، جو سردرد کی شدت کو کم کرنے میں نہایت معاون ہے۔ درحقیقت میگنیشیم کا باقاعدگی حصول درد شقیقہ کے خطرے کو 40 فیصد تک کم کر دیتا ہے۔ اس کے علاوہ پالک بلڈ پریشر اور سوزش کو کم کرنے میں مدد کرتی ہے، جو سر میں درد کا سبب ہے۔

دہی

کسی مصنوعی فلیور کے بغیر سادہ دہی ضروری وٹامنز اور مختلف غذائی اجزاء سے بھرپور ہوتی ہے۔ یہ وٹامنز اور غذائی اجزاء دیگر مسائل کے ساتھ سردرد سے بھی نجات دلاتے ہیں۔ ان اجزاء میں میگنیشیم، پوٹاشیم، وٹامن بی2 اور وٹامن 12 شامل ہے۔ اور جیسے کہ ہم پہلے بات کر چکے ہیں کہ یہ تمام مرکبات جسم میں سوزش، پٹھوں کے تناؤ کو کم اور خون کی گردش کو بہتر بناتے ہیں۔

سیب کا سرکہ

سیب کے سرکے کے فوائد کے بارے میں دنیا آج سے نہیں بلکہ زمانہ قدیم سے روشناس ہے، لوگ اسے پیتے ہیں،چہرے کے ماسک یا شیمپو وغیرہ میں بھی شامل کرتے ہیں، تاہم حالیہ تحقیقات نے سیب کے سرکے کے ایک اور فائدہ سے پردہ اٹھایا ہے اور وہ ہے بالواسطہ سردرد کا علاج، اس میں پوٹاشیم زیادہ مقدار میں ہوتا ہے جو سردرد سے لڑنے والے مرکبات کے لئے ضروری ہے، یہ بلڈ پریشر کنٹرول کرنے میں بھی معاون ہے۔ طبی ماہرین کہتے ہیں کہ ایک کپ کا چوتھائی حصہ سرکہ دو کپ گرم پانی میں ڈال کر اس کی بھاپ لینے سے سر کا درد جاتا رہتا ہے۔

پودینے کا تیل

سردرد کی علامات سے لڑنے کے لئے پودینے کے تیل کا استعمال تیزی سے مقبول ہو رہا ہے، خصوصاً ایسی حالت میں تو یہ تیل مزید موثر بن جاتا ہے جب سردرد تناؤ کی شکل اختیار کر لے تو ایسی صورت میں پودینے کا تیل پیشانی اور کنپٹی پر لگانے سے 15 منٹ کے اندر درد ختم یا کافی حد تک کم ہو جاتا ہے۔ تاہم یہ یاد رکھیں کہ پودینے کے تیل کی تاثیر بہت تیز ہوتی ہے لہذا اسے ہمشیہ احتیاط سے استعمال کریں، کیوں کہ بلاضرورت تیل کو جلد پر لگانے سے یہ جل بھی سکتی ہے۔

You might also like
Leave A Reply

Your email address will not be published.