Daily Mashriq Quetta Urdu news, Latest Videos Urdu News Pakistan updates, Urdu, blogs, weather Balochistan News, technology news, business news

پاکستان میں 100میں سے ایک شخص مرگی کی بیماری کا شکار

0

Get real time updates directly on you device, subscribe now.

کوئٹہ (سٹی رپورٹر)معروف معالج بولان میڈیکل یونیورسٹی کے شعبہ نیورولوجی کے سربراہ ڈاکٹر محمد سلیم بڑیچ نے کہا ہے کہ پاکستان میں 100میں سے ایک شخص مرگی کی بیماری کا شکار ہے۔ بلوچستان میں اس کا تناسب 3فیصد جبکہ بچوں میں اس کی شرح 2گنا زیادہ ہے دنیا بھر میں 50ملین سے زائد لوگ اس مرض میں مبتلا ہیں۔ مرگی کے مریضوں کا علاج پاکستان میں بھی موجود ہے۔ 90فیصد مرگی کے مریض ذہنی طورپر مکمل صحت یاب ہوتے ہیں ان خیالات کا اظہار انہوں نے اپنے دیگر ساتھی ڈاکٹرز ڈاکٹر وزیر اکبر خان، ڈاکٹر انجم فاروق، ڈاکٹر احمد ولی سمیت دیگر کے ہمراہ پیر کو کوئٹہ پریس کلب میں پریس کانفرنس کے دوران کیا۔ انہوںنے کہاکہ 8فروری کا دن دنیا بھر میں مرگی کا عالمی دن ہے۔ اس لئے ہم آج عوام میں شعور اجاگر کرنے کیلئے آئے ہیں۔ انہوں نے کہاکہ ہر شخص کو ایک فیصد مرگی کی بیماری کا ہر وقت خدشہ رہتا ہے اور دنیا بھر میں 50ملین سے زائد لوگ اس بیماری میں مبتلا ہیں۔ پاکستان میں مرگی کا علاج اور دوائیاں صرف 30فیصد استعمال کرتے ہیں اور دیہی علاقوں میں علاج کا تناسب صرف 2فیصد ہے۔ انہوں نے کہاکہ بروقت اور صحیح علاج کروانے پر یہ مرض 70فیصد سے زائد مریضوں میں مکمل طورپر کنٹرول کیا جا سکتا ہے۔ انہوں نے کہاکہ مرگی کی عام طورپر دو اقسام ہیں پہلی قسم میں بے ہوشی اور دوسری میں مریض گر کر زخمی اور اس کی زبان کٹ سکتی ہے۔انہوں نے کہاکہ پاکستان میں مرگی کا علاج موجود ہے لیکن منفی رجحانات کی وجہ سے لوگ اس کا علاج نہیں کرواتے حالانکہ 90فیصد مرگی کے مریض علاج سے صحت یاب ہوتے ہیں ۔

Leave A Reply

Your email address will not be published.