Daily Mashriq Quetta Urdu news, Latest Videos Urdu News Pakistan updates, Urdu, blogs, weather Balochistan News, technology news, business news

توہین عدالت؛ غیرارادی طور پر نکلے الفاظ پر افسوس ہے، عمران خان

0

عمران خان کیخلاف توہین عدالت کیس میں اہم پیش رفت سامنے آگئی ہے، کیوں کہ تحریک انصاف کے چیئرمین عمران خان نے توہین عدالت کیس میں اپنا نیا جواب جمع کرادیا ہے۔ عمران خان نے اپنے جواب میں خاتون جج کے حوالے سے ادا کئے گئے الفاظ پر گہرے افسوس کا اظہار کردیا ہے۔ عمران خان نے اپنے جواب میں کہا ہے کہ غیرارادی طور پر نکلے الفاظ پر افسوس ہے، اور اپنے الفاظ پر خاتون جج سے پچھتاوے کا اظہارکرنے پر بھی شرمندگی نہیں ہوگی۔ عمران خان نے کہا ہے کہ میرا ارادہ خاتون جج کے جذبات مجروح کرنے کا نہیں تھا، خواتین کے حقوق کا علمبردار ہوں، خاتون جج کے جذبات مجروح ہوئے تو گہرا افسوس ہے۔ عمران خان نے اپنے جواب میں کہا کہ عدالت نے مجھے ضمنی جواب کی مہلت دی، لیکن سیاسی پوائنٹ اسکورنگ کی تاک میں رہنے والوں نے اس پر بھی تنقید کی۔

عمران خان نے مزید کہا ہے کہ عام آدمی کو انصاف دینے والی ماتحت عدلیہ کی آزادی پر یقین رکھتا ہوں، توہین عدالت کی کسی مہم کا سوچ بھی نہیں سکتا۔

چیئرمین تحریک انصاف نے اپنے جواب میں کہا ہے کہ شہباز گل کے ٹارچر کی خبر میڈیا اور سوشل میڈیا پر تھی، سانس لینے میں مشکلات،ماسک کی بھیک مانگتے شہباز گل کے مناظر تھے، شہباز گل کے مناظر نے ہر دل و دماغ پر اثر چھوڑا تھا۔

عمران خانے کہا کہ مصروف شیڈول کی وجہ سے پتہ نہیں تھا کہ شہبازگل کا معاملہ ہائیکورٹ میں زیر التوا ہے، پھر بھی پتہ ہوتا کیس زیر التوا ہے تو اس پر بات نہ کرتا۔

عمران خان نے اپنے جواب میں کہا کہ طلال چوہدری کا کیس الگ نوعیت کا تھا، اور انہوں نے اپنے بیان پر کبھی افسوس کا اظہار نہیں کیا تھا۔

عمران خان نے عدالت سے استدعا کی ہے کہ مودبانہ گزارش ہے کہ میری وضاحت قبول کی جائے، وضاحت قبول کرکے توہین عدالت کا شوکاز نوٹس واپس لیا جائے۔

عمران خان نے مؤقف پیش کیا ہے کہ عدالتیں معافی اور تحمل کے اسلامی اصولوں کو ہمیشہ تسلیم کرتی ہیں، عفُوو درگُزر اور معافی کے اسلامی اصول اس کیس پر بھی لاگو ہوں گے، اس کیس میں بھی عفو اور معافی کےاسلامی اصولوں کی “پیروی” ہوگی۔

عمران خان نے مزید کہا ہے کہ یقین دہانی کراتا ہوں کہ آئندہ ایسے معاملات میں انتہائی احتیاط سے کام لوں گا، کبھی ایسا بیان دیا نہ مستقبل میں دوں گا جو کسی زیرالتوا مقدمے پر اثر انداز ہو۔

You might also like
Leave A Reply

Your email address will not be published.