Daily Mashriq Quetta Urdu news, Latest Videos Urdu News Pakistan updates, Urdu, blogs, weather Balochistan News, technology news, business news

پی ایس ایل میں ناکام بائیو سکیورببل، ڈائریکٹر میڈیکل اینڈ سپورٹس سائنسز عہدے سے مستعفی

0

Get real time updates directly on you device, subscribe now.

لاہور، کراچی ( سپورٹس رپورٹر)  بائیو سکیور ببل میں دراڑوں کے بعد پی سی بی کے شعبہ میڈیکل اینڈ سپورٹس سائنسز کے سربراہ ڈاکٹر سہیل سلیم اپنے عہدے سے مستعفی ہو گئے جن پر پی ایس ایل کے التوا کی ذمہ داری ڈالنے کی کوشش کرتے ہوئے مستقبل میں بائیو سکیور ببل کیلئے غیر ملکی اداروں کی خدمات مستعار لینے کا فیصلہ کیا گیا ہے کیونکہ رواں برس پاکستان کی انٹرنیشنل سیریز کو خطرات لاحق ہو گئے ہیں۔پاکستان سپر لیگ کا چھٹا سیزن ملتوی ہونے کے بعد پی سی بی کے شعبہ میڈیکل اینڈ سپورٹس سائنسز کے سربراہ ڈاکٹر سہیل سلیم اپنے عہدے سے مستعفی ہو گئے ہیں کیونکہ بائیو سکیور ببل سے متعلق خامیوں اور کوتاہیوں کے باعث پی سی بی کو کڑی تنقید کا سامنا کرنا پڑ رہا ہے ۔ایونٹ کے 14میچوں کے بعد التوا کے بعد مختلف حلقوں کی جانب سے بائیو سکیور ببل میں موجود متعدد نقائص کی نشاندہی کی گئی جس کے پیش نظر ایک حالیہ اجلاس میں پی سی بی حکام کی جانب سے پی ایس ایل سکس کے اچانک خاتمے کی ذمہ داری ڈاکٹر سہیل سلیم کے سر منڈھنے کی کوشش کی گئی جس کے سبب انہوں نے عہدے سے علیحدگی کا فیصلہ کرلیا۔انہوں نے اپنا استعفیٰ چیئرمین پی سی بی کو ارسال کردیا ہے تاہم اس کے بارے میں حتمی فیصلہ احسان مانی کے علاوہ چیف ایگزیکٹو وسیم خان کریں گے ۔واضح رہے کہ گزشتہ برس پاکستانی ٹیم نے کوویڈ کے دوران پہلی بار انگلینڈ کا دورہ کیا تھا تو ڈاکٹر سہیل سلیم کو بھی سکواڈ کے ساتھ بھیجا گیا تھا تاکہ وہ کھلاڑیوں کی دیکھ بھال کے علاوہ اس بات کا بھی تجربہ حاصل کریں کہ ای سی بی نے بائیو سکیور ببل اور ایس او پیز کے نفاذ کیلئے کیا اقدامات کئے ہیں جبکہ انہوں نے بائیو سکیورٹی آفیسر کی حیثیت سے قومی ٹیم کے ساتھ نیوزی لینڈ کا دورہ بھی کیا مگر بدقسمتی سے انہوں نے جو کچھ سیکھا اس پر پاکستانی لیگ کے دوران عمل نہیں کرا سکے اگرچہ مختلف مواقع پر پروٹوکولز کی خلاف ورزیوں میں بعض دیگر بااثر افراد ملوث تھے ۔ذرائع کا کہنا ہے کہ بائیو سکیور ماحول کیلئے ٹھوس انتظامات کے حوالے سے پی سی بی حکام ڈاکٹر سہیل سلیم پر اعتماد کھو بیٹھے ہیں جس کے سبب پی ایس ایل سکس کے باقی میچوں کے انعقاد کی منصوبہ بندی کیلئے بائیو سکیور ببل کی تیاری کیلئے انگلینڈ یا آسٹریلیا سمیت کسی بیرون ملک کمپنی کی خدمات مستعار لینے کا فیصلہ کیا گیا ہے کیونکہ موجودہ حالات میں رواں برس انٹرنیشنل پاکستانی سیریز کو خطرات لاحق ہو چکے ہیں۔ذرائع کا دعویٰ ہے کہ ماضی میں سکیورٹی کا بہانہ بنانے والی غیر ملکی ٹیمیں اب پاکستان میں بائیو سکیورٹی انتظامات پر انگلیاں اٹھا سکتی ہیں جن سے نبرد آزما ہونے کیلئے ابھی سے حکمت عملی مرتب کرنی ہوگی۔ رواں برس اکتوبر میں انگلش ٹیم کو مختصر فارمیٹ کے میچوں کیلئے پاکستان کا دورہ کرنا ہے جبکہ اس کے بعد آسٹریلیا اور نیوزی لینڈ کیخلاف بھی ہوم سیریز شیڈول ہیں اور پی سی بی کی جانب سے فوری اقدامات نہ کئے گئے تو پاکستان کرکٹ ایک نئے مسئلے سے دوچار ہو سکتی ہے اور یہ ملک میں انٹرنیشنل کرکٹ کی بحالی کے عمل کیلئے بہت بڑا دھچکا ہوگا۔

Leave A Reply

Your email address will not be published.