Daily Mashriq Quetta Urdu news, Latest Videos Urdu News Pakistan updates, Urdu, blogs, weather Balochistan News, technology news, business news

مچھ واقعہ : وزیراعلیٰ بلوچستان اور وفاقی وزراءکے ایک بار پھر مذاکرات ناکام

0

Get real time updates directly on you device, subscribe now.

کوئٹہ(آن لائن )مچھ واقعہ کے لواحقین اور دھرنے کے شرکاءسے وزیراعلیٰ بلوچستان اور وفاقی وزراءکے ایک بار پھر مذاکرات ناکام ،دھرنا منتظمین نے وزیراعظم کے آنے سے میتوں اور دھرنا ختم کرنے کو مشروط کردیا۔بدھ کے روز وزیراعلیٰ بلوچستان جام کمال کی قیادت میں وفد نے مغربی بائی پاس شاہراہ پر مچھ واقعہ کے لواحقین اور مجلس وحدت المسلمین کی جانب سے جاری دھرنے کے منتظمین سے مذاکرات کئے اس موقع پر وفاقی وزیر علی زیدی ،وزیراعظم کے معاﺅن خصوصی سید عباس بخاری ،ڈپٹی اسپیکر قومی اسمبلی قاسم خان سوری ،صوبائی وزراءمیر ضیاءاللہ لانگو ،انجینئر زمرک خان اچکزئی ،پارلیمانی سیکرٹری بشریٰ رند ،چیف سیکرٹری کیپٹن(ر) فضیل اصغر ودیگر بھی موجود تھے ۔وزیراعلیٰ نے دھرنے کے شرکاءسے خطاب کرتے ہوئے کہاکہ میں مچھ واقعہ سے ایک دن قبل دبئی گیا تھا میڈیا پر غلط خبریں نشر کی گئی بلوچستان کو جلتے سب نے دیکھاہے دس سال پہلے کوئٹہ کی حالت کیسی تھی سب کو پتہ ہے لیکن ہم نے ایک محنت کی اورڈھائی سالہ حکومتی مدت کے دوران ہم نے بہت سے چیزوں کو بہتر کیاہے ،صوبائی دارالحکومت کوئٹہ ہم سب کا مشترکہ شہر ہے ،ہم نے ہمیشہ سب کوسوچا کبھی ایک کمیونٹی کا نہیں سوچا اگر یہاں حالات خراب ہوںگے تو اس کے نتائج ہم سب بھگتیںگے مچھ واقعہ سے بلوچستان ایک بار پھر لہو لہان ہوگیاہے جس سے ہم سب کو نقصان ہواہے موت انسان کے ہاتھ میں نہیںبلکہ اللہ کے ہاتھ میں ہے غفلت پر میں اور میری کابینہ سمیت ہرشخص جواب دہ ہیں بلوچستان میں بیرونی طاقتوں کی دخل اندازی کا سب کو معلوم ہے ہم یہاں سیاست کرنے نہیں آئے ہیں بلوچستان نے ہمیشہ سے مشکل حالات کامقابلہ کیاہے امام بارگاہ فاتحہ خوانی کیلئے گیاتھا صوبے کے مسائل ہم اور آپ نے مل کر حل کرناہے ،اگر ہم نیت ٹھیک کرینگے تو مسائل حل کرنے میں آسانی ہوگی،ٹیکنالوجی کادور ہے کوئی شے چھپ نہیں سکتا مچھ واقعہ بہت ناخوشگوار واقعہ گزرا ،میں بحیثیت وزیراعلیٰ ایک ذمہ دار ہوں ، میری آپ سے اپیل اور التجاءہے کہ لواحقین میتوں کی تدفین کرکے دھرنا ختم کرے ،وزیراعظم گورنر سمیت سب آئیںگے اور آپ کے ساتھ اپنے احساسات شیئر کرینگے مسائل شروع دن سے آخر تک رہیںگے لیکن اگر کوشش کی جائے تو ان مسائل کو حل کیاجاسکتاہے ،نیتوں میں فطور سے کبھی بھی مسائل حل نہیں ہونگے ،لواحقین جس غم سے گزررہے ہیں ان احساسات میں نہیں بتا سکتا اگر عمران خان کے آنے سے یہاں مسئلے حل ہوتے تو وہ دو منٹ نہیں لگیںگے یہاں آنے میں ،اگر آئے تو وہ کہیں گے کہ یہ مسائل صوبائی حکومت کے ہیں ،چاغی کے روٹ سے گزرنا زائرین کیلئے بہت بڑا عذاب تھا لیکن آج حالات قدرے بہتر ہے ۔وزیراعظم عمران خان سے میری بات ہوئی ہیں وزیراعظم نے اعلان کیاہے کہ وہ ورثاءکے پاس خود آئیںگے ،حالات جیسے بھی ہوں وزیراعظم کو آنا چاہےے ۔اس سے قبل صدر پاکستان بھی آئے تھے ۔

Leave A Reply

Your email address will not be published.