Daily Mashriq Quetta Urdu news, Latest Videos Urdu News Pakistan updates, Urdu, blogs, weather Balochistan News, technology news, business news

توانائی کا شعبہ:درپیش چیلنجز اور جامع حکمت عملی کی ضرورت

0

Get real time updates directly on you device, subscribe now.

 

اتوار4اکتوبر2020ئ

ایک خبر کے مطابق وزیراعظم عمران خان نے گزشتہ روز ایک بار پھر توانائی بحران کے پیش نظر دوٹوک اقدامات کی ضرورت پر زور دیتے ہوئے ہدایت کی ہے کہ درپیش توانائی کے چیلنجز کو حل کرنے کے لئے جامع حکمت عملی اپنائی جائے نے کی ضرورت ہے۔ملک میں تیل اور گیس کی دریافت اور پیداوار میں اضافہ سے متعلق اجلاس کی صدارت کرتے ہوئے وزیراعظم نے کہا کہ عوام پر قیمتوں کے بوجھ کو کم کرنےکے لئےتمام سیکٹرز میں ٹیکنالوجی کو بروئے کار لایاجائے۔ پرانے طریقہ کار کے استعمال کے نتیجے میں ہونے والے ضیاع کو روکا جائے وزیراعظم عمران خان کی زیر صدارت منعقدہ اس اجلاس میں ملک میں تیل اور گیس کی دریافت اور پیداوار میں اضافے کی صورتحال کاتفصیلی جائزہ لیا گیا۔ وفاقی وزراءعمر ایوب خان، شبلی فراز، معاون خصوصی ندیم بابر اور سینئر افسران بھی اجلاس میں شریک تھے۔ وزیراعظم میڈیا آفس کے مطابق سیکرٹری پیٹرولیم نے اجلاس کو ایکسپلوریشن اینڈ پروڈکشن مینجمنٹ سسٹم کے حوالے سے تفصیلی بریفنگ دی۔ اجلاس کو بتایا گیا کہ اس سسٹم کے نفاذ سے ملک میں تیل اور گیس کی مقامی پیداواری استعداد کو بڑھانے میں مدد ملے گی۔ یہ نظام حکومت پاکستان کے زیر نگرانی کمپنیوں اور پرائیویٹ کمپنیوں کے پاس موجود تیل اور گیس سے متعلقہ معلومات کو یکجا کر کے ڈیٹا بیس پر مبنی ہوگا۔ اس نظام کی بدولت ملکی تیل اور گیس کے وسائل کو موثر اور کم لاگت میں عوام کے لیے دستیابی میں بھی مدد ملے گی۔اس موقع پر وزیراعظم عمران خان کا کہنا تھا کہ پاکستان کو درپیش توانائی کے چیلنجز کو حل کرنے کے لئے مربوط اور جامع حکمت عملی اپنانے کی ضرورت ہے، ایکسپلوریشن اینڈ پروڈکشن منیجمنٹ سسٹم کے نفاذ سے تیل اور گیس کے ذخائر سے کم لاگت میں استفادہ حاصل کیا جاسکے گا جبکہ قومی خزانے پر پڑنے والے بوجھ کو کم اور عوام کو سستے داموں پر تیل اور گیس کی فراہمی بھی ممکن ہو سکے گی وزیر اعظم نے اس بات پر زور دیا کہ عوام پر قیمتوں کے اضافی بوجھ کو کم کرنے کے لیے تمام سیکٹرز میں ٹیکنالوجی کو بروئے کارلایا جائے تاکہ پرانے طریقہ کار کے استعمال کے نتیجے میں ہونے والے ضیاع کو روکا جائے۔ اس ضمن میں بچت سے قومی زرمبادلہ کے ذخائر میں اضافہ بھی ہوگا۔ہم یہ سمجھتے ہیں کہ وزیراعظم عمران خان نے جو ہدایات کی ہیں ان پر عمل پیرا ہونے سے ملک میں توانائی بحران سے نمٹنے اور طلب و رسد سمیت دیگر مسائل سے نمٹنے میں خاطرخواہ مدد ملے گی موجودہ حکومت کو سابقہ حکومتوں سے جو مسائل ورثے میں ملے ان میں توانائی کا بحران بھی شامل ہے گوکہ توانائی بحران سے نمٹنے کے لئے گزشتہ چند برسوںکے دوران ہم نے کافی اقدامات بھی اٹھائے ہیں تاہم توانائی کے ذرائع اور پیداوار میں اضافے نیز طلب اور رسد میں حائل فرق کے خاتمے اوراس سے جڑے دیگر مسائل کے حل کے لئے ابھی مزیدا قدامات اٹھانے کی اشد ضروری ہے باقی دنیا کی طرح ہمارے ہاں بھی توانائی کا ذریعہ تیل اور گیس ہی ہے حالیہ کچھ عرصے کے دوران پاکستان سمیت پوری دنیا میں اس خدشے نے سراٹھایا ہے کہ اگر متبادل ذرائع سے توانائی کے حصول پر توجہ نہ دی گئی اور خاطرخواہ منصوبہ بندی نہیں کی گئی تو آنے والے چند عشروں میں قدرتی گیس اور تیل کے ذخائر ختم ہوسکتے ہیں جو یقینا کسی المیے سے کم نہیں ہوگاعام طور پر ، دنیا کے بنیادی توانائی کے ذرائع میں پٹرولیم پہلے نمبر ہے اس کے بعد قدرتی گیس ، کوئلہ ، جوہری توانائی ، ہائیڈرو پاور ، قابل تجدید توانائی کا حصہ آتا ہے اب ایک ایسے وقت میں جب تیل کی قیمتوں میں اتار چڑھاو¿ کے مسائل بھی جنم لے رہے ہیں اور ان مسائل کی بناءپر عالمی معیشت پر ہمیشہ خطرہ منڈلاتا رہتا ہے وہاں یہ نیا خدشہ کہ اگر ہم نے منصوبہ بندی نہیں کی تو تیل اور گیس کے ذخائر ختم بھی ہوسکتے ہیں یہ خطرے کی گھنٹی ہے بنیادی طور پر ، تیل اور گیس کے منصوبوں میں ایکسپلوریشن ، پیداوار اور پیداواری ذرائع کو جدید خطوط پر استوار کرنے کی ضرورت ہمیشہ سے موجو د رہی ہے تکنیکی انفراسٹرکچر اور تربیت یافتہ اور تجربہ کار ماہر عملے کے ساتھ تیل اور قدرتی گیس سمیت توانائی کے دیگر تمام ذرائع سے خاطرخواہ استفادے کے لئے ضروری ہے کہ وقت کی ضرورتوں اور حالات کے تقاضوں سے ہم آہنگ منصوبہ بندی کی جائے موجودہ حکومت اس حوالے سے سابقہ حکومتوں کے مقابلے میں زیادہ حساس بھی ہے اور معاملہ فہمی کا مظاہرہ کرتے ہوئے عملی اقدامات بھی اٹھارہی ہے جس پر حکومت کی جتنی ستائش کی جائے کم ہے توانائی بحران سے نمٹے بغیر ہم معاشی ترقی اور استحکام کے دیرینہ اہداف تک رسائی بھی حاصل نہیں کرسکتے توانائی کے بحران سے نمٹنے کے لئے وزیراعظم عمران خان کی قیادت میں موجودہ حکومت پہلے بھی متعدد اہم اقدامات اٹھاچکی ہے اقتصادی رابطہ کمیٹی ، مشترکہ مفادات کونسل ، کابینہ کے اجلاسوں میں اس اہم مسئلے کی نہ صرف صدائے بازگشت سنائی دیتی رہی ہے بلکہ اس اہم ترین مسئلے سے نمٹنے کے لئے اہم فیصلے بھی ہوتے رہے ہیں ہمیں امید ہے کہ ان اقدامات کا تسلسل برقرار رکھتے ہوئے موجودہ حکومت ملک و قوم کو درپیش اس اہم اور فوری اہمیت کے حامل مسئلے کے تدارک اور سدباب کے لئے تمام وسائل بروئے کار لاتے ہوئے کوئی دقیقہ فروگزاشت نہیں کرے گی اور قوم کی امیدوں پر پورا اترے گی ۔

 

Leave A Reply

Your email address will not be published.