Daily Mashriq Quetta Urdu news, Latest Videos Urdu News Pakistan updates, Urdu, blogs, weather Balochistan News, technology news, business news

لداخ کشیدگی: چینی فوج نے ایک اور بھارتی کمانڈو کو موت کے گھاٹ اُتار دیا

0

Get real time updates directly on you device, subscribe now.

نئی دہلی:  رواں سال جون کے مہینے میں 20 بھارتی فوجیوں کو ہلاک کرنے کے بعد چین اور بھارت کی کشیدگی ایک مرتبہ پھر بڑھنے لگی ہے، تازہ کارروائی کے دوران پیپلز لبریشن آرمی نے ایک اور بھارتی کمانڈو کو موت کے گھاٹ اُتار دیا ہے۔

غیر ملکی خبر رساں ادارے ’الجزیرہ‘ کی رپورٹ کے مطابق بھارتی سپیشل فورسز کا ایک کمانڈو تازہ لڑائی کے دوران مارا گیا ہے، لڑائی کے دوران متعدد بھارتی فوجی زخمی بھی ہوئے ہیں۔

 رپورٹ کے مطابق گزشتہ اڑتالیس گھنٹوں کے دوران چین اور بھارت کے درمیان سرحدی کشیدگی بڑھتی چلی جا رہی ہے، بیجنگ اور نئی دہلی ایک دوسرے پر الزام لگا رہے ہیں کہ سرحدی حدود کی خلاف ورزی کی جا رہی ہے۔

عرب خبر رساں ادارے کے مطابق تازہ کارروائی کے دوران مرنے والے بھارتی کمانڈو کا تعلق ہماچل پردیش سے تھا، ہماچل پردیش کی مقامی رہنما نے بھارتی فوجی کے مارے جانے کی تصدیق کی۔ البتہ بھارت اور چین کے جانے سے تاحال کسی سپاہی کی موت کی تصدیق نہیں ہوئی۔

اس سے قبل بھارتی اخبار دی ہندو نے انکشاف کیا تھا کہ مرکزی حکومت کو ملنے والی انٹیلی جنس معلومات کے مطابق لائن آف ایکچوئل کنٹرول کیساتھ لداخ کا تقریباً ایک ہزار مربع کلو میٹر کا علاقہ اس وقت چین کے زیر کنٹرول ہے۔ دوسری طرف چین نے انتباہی انداز میں کہا ہے کہ اگر بھارت مقابلہ کرنا چاہتا ہے تو اس کو ماضی کے برعکس زیادہ فوجی نقصان اٹھانا پڑے گا۔

اخبار کے مطابق چین اپریل سے لائن آف ایکچوئل کنٹرول کیساتھ فوج جمع کرکے اپنی موجودگی کو مستحکم کر رہا ہے۔ ایک افسر نے ‘دی ہندو ’ کو بتایا کہ ڈپسانگ کے میدانی علاقے سے چوشل تک چینی فوجی منظم انداز میں غیر معینہ لائن آف ایکچوئل کنٹرول کیساتھ نقل وحرکت کر تے رہے ہیں۔

انہوں نے انکشاف کیا کہ ڈپسانگ کے میدانی علاقے میں پٹرولنگ پوائنٹ 10 سے 13 تک لائن آف ایکچوئل کنٹرول کا بھارتی حصہ 900 مربع کلو میٹر کے لگ بھگ چین کے زیر تسلط ہے۔ ان میں وادی گلوان میں 20 مربع کلو میٹر اور ہاٹ سپرنگز میں 12 مربع کلو میٹرکا علاقہ مکمل طور پر چینی قبضے میں ہے ، پینگونگ تسو جھیل کا 65 مربع کلو میٹر جبکہ چوشل میں 20 مربع کلو میٹر کا علاقہ بھی چینی کنٹرول میں ہے۔

Leave A Reply

Your email address will not be published.