Daily Mashriq Quetta Urdu news, Latest Videos Urdu News Pakistan updates, Urdu, blogs, weather Balochistan News, technology news, business news

بھارت کورونا لہر : مودی کے ماہرین کی تنبیہ نظر انداز کرنے پر تباہی آئی

0

Get real time updates directly on you device, subscribe now.

نئی دہلی :  بھارت میں کورونا کی تباہ کاریاں جاری ہیں،ہسپتال مریضوں سے بھر چکے ،آکسیجن کی کمی سے مزید26افراد دم توڑگئے ۔ہفتے کو بھارت میں وبا سے ریکارڈ3688افراد ہلاک ہوئے جبکہ 3 لاکھ 92ہزار سے زائد نئے کیسز رپورٹ ہوئے ،عالمی ماہرین نے فروری میں نئی لہرسے متعلق مودی سرکار کو خبر دار کیاتھا لیکن مودی نے اس تنبیہ کو نظر انداز کیا۔وبا سے سب سے زیادہ متاثرہ بھارتی ریاست مہاراشٹرا میں 63ہزار نئے مریض جبکہ 809افرادہلا ک ہوئے ،دہلی میں 25ہزار نئے کیسز جبکہ 412اموات ہوئیں۔بھارتی دارالحکومت کے ہسپتال میں آکسیجن ختم ہونے سے ڈاکٹر سمیت 12 افراد ہلاک ہو گئے ۔ ادھر آندھراپردیش میں آکسیجن نہ ملنے سے 14مریض دم توڑگئے ۔اتر پردیش میں بلدیاتی انتخابات کے دوران ڈیوٹی سر انجام دینے والے 700 سے زائد اساتذہ کورونا کے باعث ہلاک ہو گئے ۔ عرب نیوز سے بات کرتے ہوئے ترجمان اساتذہ یونین نے بتایا کہ کورونا کی ہلاکت انگیزی کے باوجود صوبے میں بلدیاتی الیکشن کرائے گئے جن میں 15 ہزار سے زائد اساتذہ نے انتخابی ذمہ داریاں ادا کیں۔بھارت کے اپوزیشن رہنما راہول گاندھی نے ملک میں کورونا وائرس کی ہلاکت خیز لہر کا ذمہ دار مودی حکومت کو قرار دے دیا۔ بھارتی نیوز ایجنسی کو انٹرویو کے دوران انہوں نے کہاکہ جس وقت ماہرین کورونا کی دوسری لہر کے بارے میں خبردار کر رہے تھے ، وزیر اعظم مودی کووڈ 19 کے خلاف فتح کی نوید سنا رہے تھے ۔ مودی نے بڑھتے کورونا کیسز کو بھی مسلسل نظر انداز کیا، انتخابی ریلیوں کے ذریعے وائرس کو مزید پھیلنے کا موقع دیا، رائٹرز کے مطابق عالمی وبا سے متعلق مشاورت کیلئے بھارتی حکومت نے طبی ماہرین کی جو ٹیم تشکیل دی، اس نے فروری میں نئی لہر کی شدت سے متعلق خبردار کر دیا تھا، مگر وزیراعظم مودی نے ان کی تنبیہ نظر انداز کر دی تھی۔ رپورٹ کے مطابق ٹیم میں شامل چار طبی ماہرین نے نیوز ایجنسی کیساتھ گفتگو کے دوران بتایا کہ انتباہ کے باوجود حکومت نے وائرس کا پھیلاؤ روکنے کے خاطر خواہ انتظامات کئے نہ سخت پابندیاں لگائیں، بلکہ لاکھوں افراد ماسک کے بغیر مذہبی اجتماعات اور سیاسی ریلیوں میں شرکت کرتے رہے ،جن کا اہتمام حکمران بی جے پی اور اپوزیشن کی جماعتیں کر رہی تھیں ،اس دوران متنازعہ زرعی قوانین پر مودی حکومت کے خلاف دارالحکومت کے قرب وجوار میں ہزاروں کسانوں کا احتجاج بھی جاری رہا،نیوز ایجنسی کے مطابق سرکاری فورم کے ایک رکن نے تسلیم کیا کہ ماہرین نے فروری میں تیزی سے پھیلنے والے کورونا وائرس کی نئی قسم دریافت کر لی تھی، جسے بھارت میں وائرس کی تبدیل شدہ شکل کا نام دیا جاتا ہے ۔ادھر دنیا بھر میں وبا سے ہلاکتیں 32لاکھ سے تجاوزکرگئیں۔

Leave A Reply

Your email address will not be published.