Daily Mashriq Quetta Urdu news, Latest Videos Urdu News Pakistan updates, Urdu, blogs, weather Balochistan News, technology news, business news

بلوچستان سے سینیٹ کی 12نشستوں پر31امیدواروں کے درمیان مقابلہ ہوگا

0

Get real time updates directly on you device, subscribe now.

 

کوئٹہ(این این آئی)بلوچستان سے سینیٹ کی 12نشستوں پر31امیدواروں کے درمیان مقابلہ ہوگا، پولنگ کا سامان بلوچستان اسمبلی پہنچا دیاگیا پولنگ صبح 9سے شام 5بجے تک بغیر کسی وقفے کے جاری رہے گی، بلوچستان اسمبلی کے 65ارکان اپنا ووٹ استعمال کریں گے ۔تفصیلات کے مطابق بلوچستان سے سینیٹ کی 12نشستوں پر آج انتخابات ہو رہے ہیں جن میں7جنرل نشستوں پر 15،ٹیکنو کریٹ کی 2نشستوں 4، خواتین کی دو نشستوں پر8جبکہ غیر مسلموں کے لئے مختص ایک نشست پر 4امیدوار مد مقابل ہیں بلوچستان نیشنل پارٹی(عوامی ) کے سربراہ میر اسرار اللہ زہری نے باقاعدہ طور پر جنرل نشست سے دستبردارہونے کے حوالے سے الیکشن کمیشن کو آگاہ کردیا تاہم جنرل نشستوں پر آزاد امیدوار میر سردار خان رند اور بلوچستان عوامی پارٹی کی ستارہ ایاز نے پریس کانفرنس کے ذرےعے الیکشن سے دستبرداری کا اعلان کیا جبکہ خواتین نشست پر آزاد امیدوار نسیمہ احسان شاہ بھی بی این پی میں شمولیت کے بعد غیر اعلانیہ طور پر دستبردار ہوگئی ہیں الیکشن کمیشن کے ذرائع نے این این آئی کو بتایا کہ میر اسرار اللہ زہری کے علاوہ کسی بھی امیدوار نے دستبردارہونے کے حوالے سے الیکشن کمیشن کو آگاہ نہیں کیا جس کے بعد انکے نام بیلٹ پیپروں پر درج ہونگے ۔ الیکشن کمیشن ذرائع نے بتایا کہ بلوچستان کی 12 نشستوں کیلئے 400 بیلٹ پیپرز چھاپے گئے ہیں،بلوچستان کی بارہ نشستوں کیلئے اراکین کو چار بیلٹ پیپرز دیے جائیںگے۔الیکشن کمیشن حکام کے مطابق جنرل نشستوں کیلئے بیلٹ پیپرزکا رنگ سفید، خواتین نشستوں کارنگ گلابی،،ٹیکنو کریٹس کا سبز اوراقلیتی کا رنگ پیلا ہوگا،بیلٹ پیپرز پر امیدواروں کے نام اردو حروف تہجی کی ترتیب سے پرنٹ کئے گئے ہیں جن کے سامنے ارکان اسمبلی نے اپنی ترجیحات درج کرنی ہونگی اگر کسی رکن سے غلطی سے بیلٹ پیپر ضا ئع ہوگیا تو اسے دوسرا بیلٹ پیپر جاری کیا جاسکے گا ،حکام کے مطابق بلوچستان میں سینیٹ کے انتخابات میں صوبائی الیکشن کمشنر محمد رازق ریٹرننگ آفیسر کے فرائض سرانجام دیں گے پولنگ کے دوران صرف سرکاری میڈیا کو کوریج کی اجازت ہوگی ۔بلوچستان سے سینیٹ کی 7جنرل نشستوں پربلوچستان عوامی پارٹی کے منظور احمد کاکڑ، سینیٹر سرفرازبگٹی، سینیٹر ستارہ ایاز، ، کیپٹن(ر) عبدالخالق اچکزئی،پرنس آغا عمر احمدزئی، جمعیت علماءاسلام کے مولانا عبدالغفور حیدری، خلیل احمد بلیدی، بلوچستان نیشنل پارٹی (مینگل) کے ساجد ترین، محمد قاسم، حسین بلوچ،پشتونخواءملی عوامی پارٹی کے سینیٹر عثمان خان کاکڑ، عوامی نیشنل پارٹی کے نوابزادہ عمر فارو ق کاسی، آزاد امیدوار میر سردار خان رند، عبدالقادر،جمہوری وطن پارٹی کے محمد جواد ہزارہ ۔ٹیکنو کریٹ کی دو نشستوں پر بلوچستان عوامی پارٹی کے بانی سعید احمد ہاشمی، میر نوید کلمتی،بی این پی کے ساجد ترین ایڈوکیٹ، جمعیت علماءاسلام کے کامران مرتضیٰ ایڈوکیٹ ،خواتین کی دو نشستوں پر بی اے پی کی ثمینہ ممتاز، ، کاشفہ گچکی، بی این پی کی شمائلہ افشین، طاہرہ جتک ،جمعیت علماءاسلام کی آسیہ ناصر، عوامی نیشنل پارٹی کی بینش سکند مسیح، ہزارہ ڈیموکریٹک پارٹی کی عاطفہ اور آزاد امیدوار نسیمہ احسان ,غیر مسلموں کی ایک نشست پر بلوچستان عوامی پارٹی کے دنیش کمار،، جمعیت علماءاسلام کے ہیمن داس، بلوچستان نیشنل پارٹی کے سنیل کمار،عوامی نیشنل پارٹی کی بینش سکندر مسیح کے درمیان مقابلہ ہوگا ،بلوچستان اسمبلی میں بی اے پی، پی ٹی آئی، اے این پی، ایچ ڈی پی، بی این پی (عوامی) ،جمہوری وطن پارٹی پر مشتمل حکومتی اتحاد کے پاس اس وقت 40ارکان کی اکثریت موجو د ہے جبکہ جمعیت علماءاسلام ، بی این پی، پشتونخواءملی عوامی پارٹی ،آزاد رکن نواب اسلم رئےسانی پر مشتمل اپوزیشن اتحاد کے پاس کل 23ارکان ہیں بلوچستان اسمبلی کے رکن نواب ثناءاللہ زہری اور پاکستان نیشنل پارٹی عوامی کے سید احسان شاہ نے اپنی پوزیشن تاحال واضح نہیں کی ہے ۔

Leave A Reply

Your email address will not be published.