کشمیر کیساتھ غداری کسی صورت میں قبول نہیں کریں گے، سراج الحق

کوئٹہ: جماعت اسلامی کے مرکزی امیر سراج الحق نے کہا ہے کہ کشمیر ایشو پر وزیراعظم نے سیاسی قیادت کو اعتماد میں نہیں لیا۔ ملک کی خارجہ پالیسی ناکام ہو چکی ہے۔ کشمیر کے ساتھ غداری کسی صورت میں قبول نہیں کریں گے۔

عوامی مارچ کے شرکا سے خطاب کرتے ہوئے سراج الحق کا کہنا تھا کہ ملکی ناکام خارجہ پالیسی کا منہ بولتا ثبوت ان اسلامی ممالک کی جانب سے مودی کو اعزازات دینا ہے جو ہمیشہ پاکستان کے ساتھ کھڑے ہوتے تھے۔

سراج الحق نے کہا کہ وزیراعظم نے اب تک مسئلہ کشمیر پر سیاسی قیادت کے ساتھ کوئی ملاقات نہیں کی حالانکہ آرمی چیف جنرل قمر جاوید باجوہ دو بار سیاسی قیادت سے ملاقات کر چکے ہیں۔

انہوں نے کہا کہ مقبوضہ کشمیر میں کرفیو سے لوگ بھوکے مر رہے ہیں لیکن پاکستان سمیت تمام اسلامی ممالک خاموش ہیں۔ کشمیر کے لوگ پاکستان کے طرف دیکھ رہے ہیں لیکن حکومت صرف اچھل کود میں لگی ہوئے۔ صرف بیانات دیے جا رہے ہیں عملاً کچھ نہیں کیا جا رہا۔

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Next Post

سعودی عرب تیل تنصیبات پر حملے میں ایران براہ راست ملوث ہے، امریکا

اتوار ستمبر 15 , 2019
Share on Facebook Tweet it Share on Google Email امریکا نے الزام عائد کیا کہ سعودی عرب میں دنیا کی سب سے بڑی تیل کمپنی آرامکو کے 2 پلانٹس پر ہونے والے ڈرون حملوں میں ایران براہ راست ملوث ہے۔ سماجی رابطے کی ویب سائٹ ٹوئٹر پر اپنے پیغام میں امریکا کے […]
سعودی عرب تیل تنصیبات پر حملے میں ایران براہ راست ملوث ہے- Mashriq Newspaper

چیف ایڈیٹر

سید ممتاز احمد

قارئین اور ناظرین کو لمحہ لمحہ باخبر رکھنے کے لئے” مشرق “ویب سائٹ اور” مشرق“ ٹی وی کااجراءکیاگیا ہے۔روزنامہ” مشرق“ کا قیام1962ءمیں عمل میں آیا تھا ۔یہ اخبار پاکستان کی جدید صحافت کے علمبردار آئین کی بالادستی ،جمہوری قدروں کے فروغ اور انسانی حقوق کے تحفظ کاعلم بلند کرنے کے عزم کے ساتھ دنیائے صحافت میں آیا تھا ۔ ”مشرق “نے جدید تقاضوں کے مطابق اپنے قارئین اور دنیا بھر میں پاکستانیوں کو باخبر رکھنے کے لئے ویب سائٹ اور ویب ٹی وی کا جناب سید ممتاز احمد شاہ چیف ایڈیٹر مشرق گروپ آف نیوزپیپرز کی نگرانی میں اجراءکیاہے ۔یہاں یہ امر قابل ذکر ہے کہ اقلیم صحافت کے درخشندہ ستارے سید ممتاز احمد کا شمار پاکستانی صحافت کے اکابرین میں ہوتا ہے۔زندگی بھر قلم وقرطاس اور پرنٹ میڈیا ہی ان کا اوڑھنا بچھونا رہا۔سید ممتاز احمد شاہ نے آج سے 50 برس قبل صحافت جیسی وادی ¿ پرخار میںقدم رکھا۔ضیائی مارشل لا کے دور میں کئی مراحل آئے جب قلم اور قرطاس سے رشتہ برقرار اور استوار رکھنا انتہائی جانگسل ہوچکا تھا لیکن وہ کٹھن اور دشوار گزار راستوں پر سے گزرتے رہے لیکن ان کے پایہ¿ استقلال میں کبھی لغزش دیکھنے سننے میں نہیں آئی۔ واضح رہے کہ سید ممتاز احمد نے ملک کے اہم ترین انگریزی اخبار ”ڈان“ ”جنگ“ ”دی نیوز“ اور روزنامہ ”مشرق“ میں اپنی گراں قدر خدمات انجام دی ہیں۔ اور ان کا مشرق کے ساتھ صحافت کا سفر جاری ہے۔