ٹرمپ کے بعد ایک اور ارب پتی نے امریکی صدر کے عہدے پر نظریں جمالیں

v

نیو یارک: موجودہ امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ کے بعد ایک اور ارب پتی نے وائٹ ہاؤس کا مکین بننے کے لیے کمر کس لی ہے۔

غیر ملکی خبر رساں ادارے کے مطابق تین بار نیو یارک کے میئر رہنے والے 77 سالہ مائیکل بلومبرگ رواں ہفتے کاغذات نامزدگی جمع کرائیں گے، صدارتی امیدوارکا چناؤ اگلے سال 3 نومبر کو ہو گا۔

ڈونلڈ ٹرمپ کے بعد ایک اور ارب پتی نے امریکی صدرکے عہدے پر نظریں جمالیں، میڈیا ٹائیکون اور سابق مئیر آف نیویارک مائیکل بلوم برگ صدارتی امیدوارکے طورپر کاغذات رواں ہفتے جمع کرایں گے۔۔

مائیکل بلومبرگ کے ترجمان کے مطابق میڈیا ٹائیکون کو تشویش ہے کہ موجودہ ڈیموکریٹک امیدوار ٹرمپ کو ہرانے کی اہلیت نہیں رکھتے اس لیے انہوں نے خود میدان میں اترنے کا فیصلہ کیا ہے۔

77 سالہ مائیکل بلومبرگ تین بارامریکی شہر نیو یارک کے مئیر رہ چکے ہیں۔ امریکی صدارتی انتخابات اگلے برس تین نومبر کو شیڈول ہیں۔

امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ کا کہنا ہے کہ اگر بلومبرگ الیکشن لڑے تو ہار جائیں گے۔

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Next Post

بابری مسجد فیصلہ، نظر ثانی درخواست دائر نہ کی جائے، امام جامع مسجد دہلی

اتوار نومبر 10 , 2019
Share on Facebook Tweet it Share on Google Email بھارت کے دارالحکومت دہلی کی جامع مسجد کے امام سید احمد شاہ بخاری نے ایودھیا معاملے کو مزید آگے نہ بڑھانے کا مشورہ دیتے ہوئے کہا ہے کہ سپریم کورٹ کے فیصلے پر نظر ثانی اپیل دائر کرنے کی ضرورت نہیں […]

چیف ایڈیٹر

سید ممتاز احمد

قارئین اور ناظرین کو لمحہ لمحہ باخبر رکھنے کے لئے” مشرق “ویب سائٹ اور” مشرق“ ٹی وی کااجراءکیاگیا ہے۔روزنامہ” مشرق“ کا قیام1962ءمیں عمل میں آیا تھا ۔یہ اخبار پاکستان کی جدید صحافت کے علمبردار آئین کی بالادستی ،جمہوری قدروں کے فروغ اور انسانی حقوق کے تحفظ کاعلم بلند کرنے کے عزم کے ساتھ دنیائے صحافت میں آیا تھا ۔ ”مشرق “نے جدید تقاضوں کے مطابق اپنے قارئین اور دنیا بھر میں پاکستانیوں کو باخبر رکھنے کے لئے ویب سائٹ اور ویب ٹی وی کا جناب سید ممتاز احمد شاہ چیف ایڈیٹر مشرق گروپ آف نیوزپیپرز کی نگرانی میں اجراءکیاہے ۔یہاں یہ امر قابل ذکر ہے کہ اقلیم صحافت کے درخشندہ ستارے سید ممتاز احمد کا شمار پاکستانی صحافت کے اکابرین میں ہوتا ہے۔زندگی بھر قلم وقرطاس اور پرنٹ میڈیا ہی ان کا اوڑھنا بچھونا رہا۔سید ممتاز احمد شاہ نے آج سے 50 برس قبل صحافت جیسی وادی ¿ پرخار میںقدم رکھا۔ضیائی مارشل لا کے دور میں کئی مراحل آئے جب قلم اور قرطاس سے رشتہ برقرار اور استوار رکھنا انتہائی جانگسل ہوچکا تھا لیکن وہ کٹھن اور دشوار گزار راستوں پر سے گزرتے رہے لیکن ان کے پایہ¿ استقلال میں کبھی لغزش دیکھنے سننے میں نہیں آئی۔ واضح رہے کہ سید ممتاز احمد نے ملک کے اہم ترین انگریزی اخبار ”ڈان“ ”جنگ“ ”دی نیوز“ اور روزنامہ ”مشرق“ میں اپنی گراں قدر خدمات انجام دی ہیں۔ اور ان کا مشرق کے ساتھ صحافت کا سفر جاری ہے۔