والدین کے قتل پر سزائے موت پانے والا چیئرمین نیب کا سوتیلا بھائی بری

لاہور(خبر نگار خصوصی)والدین کے قتل پر سزائے موت پانے والا چیئرمین نیب کا سوتیلا بھائی بری،لاہور ہائیکورٹ نے چیئرمین نیب جسٹس ریٹائرڈ جاوید اقبال کے والدین کے قتل میں سزائے موت پانےوالے 3 ملزم بری کردئیے،لاہور ہائیکورٹ میں چیئرمین نیب جسٹس ریٹائرڈ جاوید اقبال کے والدین کے قتل کیس کی سماعت ہوئی،سماعت کے دوران درخواست گزاروں کی وکیل عدالت میں پیش ہوئیں اور موقف اختیار کیا پولیس نے ملزمان کو شک کی بنیاد پر گرفتار کیا،پولیس کی جانب سے ملزمان کےخلاف ٹھوس شواہد پیش نہیں کیے گئے جبکہ ملزمان کےخلاف شہادتیں بھی موجود نہیں،انہوں نے کہا ٹرائل کورٹ نے 2016 میں حقائق کے برعکس سزائے موت سنائی،بعد ازاں عدالت نے وکیل کے دلائل مکمل ہونے پر ناکافی شواہد کی بنیاد پر چیئرمین نیب جسٹس (ر) جاوید اقبال کے سوتیلے بھائی نوید اقبال سمیت دیگر 2 ملزمان عباس او رامین کو رہا کردیا،جسٹس صداقت علی خان پر مشتمل 2 رکنی بینچ نے درخواستوں پر فیصلہ سنایا،بری ہونےوالوں میں چیئرمین نیب جاوید اقبال کے سوتیلے بھائی نوید اقبال سمیت دیگر دو ملزمان عباس اور امین بھی شامل ہیں، ملزمان پر 2011 میں لین دین کے تنازع پر چیئرمین نیب کے والدین کو قتل کرنے کا الزام تھا،جاوید اقبال کے والد سابق ڈی آئی جی پنجاب پولیس عبدالمجید اور والدہ زرینہ بی بی کو 2011ءمیں قتل کردیا گیا تھا، دولت کی لالچ میں والدین کے قتل کے الزام میں جاوید اقبال کے سوتیلے بھائی نوید اقبال اور اس کے 2 ساتھیوں عباس شاکر اور امین علی کو گرفتار کیا گیا،ماتحت عدالت نے تینوں ملزمان کو 2، 2بارسزائے موت اور ساڑھے 5لاکھ روپے فی کس جرمانے کی سزا سنائی تھی

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Next Post

لوگوں صبر کر و،13ماہ میں نیا پاکستان نہیں بنتا،عمران خان

پیر اکتوبر 7 , 2019
Share on Facebook Tweet it Share on Google Email اسلام آباد(بیورورپورٹ)وزیراعظم عمران خان نے کہاہے لوگوں میں صبر نہیں ہوتا، 13ماہ ہوئے ہیں اور کہتے ہیں کہاں ہے نیا پاکستان،آپ دیکھیں گے نیا پاکستان ایک فلاحی ریاست ہی ہوگا تفصیلات کے مطابق وزیراعظم عمران خان نے احساس سیلانی لنگر سکیم […]

چیف ایڈیٹر

سید ممتاز احمد

قارئین اور ناظرین کو لمحہ لمحہ باخبر رکھنے کے لئے” مشرق “ویب سائٹ اور” مشرق“ ٹی وی کااجراءکیاگیا ہے۔روزنامہ” مشرق“ کا قیام1962ءمیں عمل میں آیا تھا ۔یہ اخبار پاکستان کی جدید صحافت کے علمبردار آئین کی بالادستی ،جمہوری قدروں کے فروغ اور انسانی حقوق کے تحفظ کاعلم بلند کرنے کے عزم کے ساتھ دنیائے صحافت میں آیا تھا ۔ ”مشرق “نے جدید تقاضوں کے مطابق اپنے قارئین اور دنیا بھر میں پاکستانیوں کو باخبر رکھنے کے لئے ویب سائٹ اور ویب ٹی وی کا جناب سید ممتاز احمد شاہ چیف ایڈیٹر مشرق گروپ آف نیوزپیپرز کی نگرانی میں اجراءکیاہے ۔یہاں یہ امر قابل ذکر ہے کہ اقلیم صحافت کے درخشندہ ستارے سید ممتاز احمد کا شمار پاکستانی صحافت کے اکابرین میں ہوتا ہے۔زندگی بھر قلم وقرطاس اور پرنٹ میڈیا ہی ان کا اوڑھنا بچھونا رہا۔سید ممتاز احمد شاہ نے آج سے 50 برس قبل صحافت جیسی وادی ¿ پرخار میںقدم رکھا۔ضیائی مارشل لا کے دور میں کئی مراحل آئے جب قلم اور قرطاس سے رشتہ برقرار اور استوار رکھنا انتہائی جانگسل ہوچکا تھا لیکن وہ کٹھن اور دشوار گزار راستوں پر سے گزرتے رہے لیکن ان کے پایہ¿ استقلال میں کبھی لغزش دیکھنے سننے میں نہیں آئی۔ واضح رہے کہ سید ممتاز احمد نے ملک کے اہم ترین انگریزی اخبار ”ڈان“ ”جنگ“ ”دی نیوز“ اور روزنامہ ”مشرق“ میں اپنی گراں قدر خدمات انجام دی ہیں۔ اور ان کا مشرق کے ساتھ صحافت کا سفر جاری ہے۔