‘نو ڈیل نو کمپرو مائز’، کسی کو رعایت نہیں ملے گی: وزیراعظم عمران خان

اسلام آباد: وزیراعظم عمران خان نے کسی بھی قسم کی ڈیل کے امکان کو مسترد کرتے ہوئے کہا ہے کہ نو ڈیل، نو کمپرومائز کی پالیسی کے تحت احتساب کا عمل جاری رہے گا۔

 وزیراعظم عمران خان سے تحریک انصاف کے رہنماء بابر اعوان نے اسلام آباد میں ملاقات کی جس میں حکومت کے آئینی و قانونی معاملات پر تبادلہ خیال کیا گیا۔ ملاقات میں وزیراعظم کے امریکا اور سعودی عرب کے دوروں سے متعلق معاملات بھی زیر بحث آئے۔

 اس موقع پر وزیراعظم نے کہا کہ جنرل اسمبلی میں خطاب اہم ہوگا، پوری توجہ کشمیر کاز پر مرکوز ہے۔ عمران خان نے کسی بھی قسم کی ڈیل کے امکانات کو ایک بار پھر مسترد کرتے ہوئے کہا کہ ملک میں پہلی مرتبہ احتساب کا عمل سیاسی مداخلت سے آزاد ہے، نو ڈیل نو کمپرومائز پالیسی کے تحت احتسابی عمل جاری رہے گا۔

 بابر اعوان نے کہا کہ پہلی بار کامیاب خارجہ پالیسی کے باعث پوری دنیا میں کشمیر کا مقدمہ سنا گیا اور حکومت کی جارحانہ حکمت عملی درست اقدام ثابت ہوا، ڈیل کی خبریں پھیلانے والوں کو مایوسی ہو گی۔

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Next Post

باکسر محمد وسیم کی پذیرائی نہ ہونے پر وسیم اکرم دلبرداشتہ

منگل ستمبر 17 , 2019
Share on Facebook Tweet it Share on Google Email لاہور: پاکستان کے لیے متعدد کارنامہ سرانجام دینے والے پاکسر محمد وسیم کی شایان شان پذیرائی نہ ہونے پر قومی کرکٹ ٹیم کے سابق کپتان وسیم اکرم خاصے دلبرداشتہ ہیں۔ محمد وسیم نے فلپائنی حریف کو پہلے ہی رائونڈ میں ناک آوٹ […]

چیف ایڈیٹر

سید ممتاز احمد

قارئین اور ناظرین کو لمحہ لمحہ باخبر رکھنے کے لئے” مشرق “ویب سائٹ اور” مشرق“ ٹی وی کااجراءکیاگیا ہے۔روزنامہ” مشرق“ کا قیام1962ءمیں عمل میں آیا تھا ۔یہ اخبار پاکستان کی جدید صحافت کے علمبردار آئین کی بالادستی ،جمہوری قدروں کے فروغ اور انسانی حقوق کے تحفظ کاعلم بلند کرنے کے عزم کے ساتھ دنیائے صحافت میں آیا تھا ۔ ”مشرق “نے جدید تقاضوں کے مطابق اپنے قارئین اور دنیا بھر میں پاکستانیوں کو باخبر رکھنے کے لئے ویب سائٹ اور ویب ٹی وی کا جناب سید ممتاز احمد شاہ چیف ایڈیٹر مشرق گروپ آف نیوزپیپرز کی نگرانی میں اجراءکیاہے ۔یہاں یہ امر قابل ذکر ہے کہ اقلیم صحافت کے درخشندہ ستارے سید ممتاز احمد کا شمار پاکستانی صحافت کے اکابرین میں ہوتا ہے۔زندگی بھر قلم وقرطاس اور پرنٹ میڈیا ہی ان کا اوڑھنا بچھونا رہا۔سید ممتاز احمد شاہ نے آج سے 50 برس قبل صحافت جیسی وادی ¿ پرخار میںقدم رکھا۔ضیائی مارشل لا کے دور میں کئی مراحل آئے جب قلم اور قرطاس سے رشتہ برقرار اور استوار رکھنا انتہائی جانگسل ہوچکا تھا لیکن وہ کٹھن اور دشوار گزار راستوں پر سے گزرتے رہے لیکن ان کے پایہ¿ استقلال میں کبھی لغزش دیکھنے سننے میں نہیں آئی۔ واضح رہے کہ سید ممتاز احمد نے ملک کے اہم ترین انگریزی اخبار ”ڈان“ ”جنگ“ ”دی نیوز“ اور روزنامہ ”مشرق“ میں اپنی گراں قدر خدمات انجام دی ہیں۔ اور ان کا مشرق کے ساتھ صحافت کا سفر جاری ہے۔