نوازشریف کو لند ن جانے کی اجازت

اسلام آباد(بیورورپورٹ)حکومت نے سابق وزیراعظم نوازشریف کو لندن جانے کی اجازت دےدی،نام ای سی ایل سے نکالنے کی کارروائی شروع،تفصیلات کے مطابق حکومت نے سابق وزیراعظم نواز شریف کو بیرون ملک جانے کی اجازت دےدی اور نام ای سی ایل سے نکالنے کی کارروائی شروع کردی گئی،ذرائع کے مطابق ای سی ایل سے نام نکالنے کےلئے وفاقی کابینہ کو خط لکھا جائےگا، کابینہ سے منظوری کے بعد نواز شریف کا نام ای سی ایل سے نکالا جائےگا جبکہ ذرائع وزارت داخلہ کے مطابق نوازشریف کا نام 48 سے 72 گھنٹوں میں ای سی ایل سے نکال دیا جائےگا وہ بیرون ملک جاسکیں گے،ذرائع کے مطابق نواز شریف کو ایئر ایمبولینس میں بیرون ملک لےجایا جاسکتا ہے ان کےلئے ایئر ایمبولینس کی ضرورت پڑی تو درخواست کی جائےگی دوسری جانب وزیراعظم عمران خان کے معاون خصوصی برائے سیاسی امور نعیم الحق نے تصدیق کرتے ہوئے کہاحکومت نے نواز شریف کو بیرون ملک جانے کی اجازت دےدی ،نعیم الحق نے کہا نوازشریف سخت بیمار ہیں ہم نے رپورٹس دیکھی ہیں ہر پاکستانی کو اپنی مرضی کا علاج کرانے کا حق حاصل ہے، نوازشریف کی بیماری کا معلوم ہوتے ہی وزیراعظم عمران خان انہیں باہر بھجوانے کا فیصلہ کرچکے تھے،وزیراعظم نے خود نوازشریف کی بیماری سے متعلق تمام رپورٹس دیکھیں، نوازشریف شدید بیمار ہیں ان کا علاج ترجیح ہونی چاہئے، دعا ہے نواز شریف صحتیاب کو ہو کر واپس آئیں،نواز شریف کے بیرون ملک علاج پر کوئی اعتراض نہیں البتہ عدالت کی صوابدید ہے وہ نوازشریف کو ایک یا زیادہ مرتبہ باہر جانے کی اجازت دے اب عدالت فیصلہ کرے گی نوازشریف کتنے عرصے کےلئے باہر جائیں گے،نوازشریف کی ضمانت کا فیصلہ عدالتوں نے کرنا تھا اب جب عدالت نے انہیں ضمانت پر رہا کردیا ہے تو حکومت نے نام ای سی ایل سے نکالنے کا فیصلہ کیا،انہوں نے مزید کہا میں خود بیمار ہوں اور کئی دن سے دفتر نہیں جارہا،معاون خصوصی برائے اطلاعات ونشریات فردوس عاشق اعوان نے کہاسابق وزیر اعظم نوازشریف کی صحت کے حوالے سے کوئی سیاست نہیں کی جائیگی ،نواز شریف کو عدالت نے طبی بنیاد پر ضمانت دی،وزارت داخلہ کو نوازشریف کا نام ای سی ایل سے نکالنے کی درخواست ملی ہے،نوازشریف کے کیس میں نیب مدعی ہے اس لئے متعلقہ حکام کی رائے لی گئی ہے،سرکاری میڈیکل بورڈ سے بھی نواز شریف کی صحت سے متعلق رائے طلب کرلی،وزیراعظم عمران خان نے بار ہا واضح کیا ہے سیاست اپنی جگہ انسانی ہمدردی اپنی جگہ ہے،نوازشریف کی صحت کے حوالے سے کوئی سیاست نہیں کی جائےگیجبکہ وزیر ریلوے شیخ رشید نے پیشگوئی کی ہے نوازشریف بیرون ملک چلے جائیں گے ،مریم نوازوالدکےساتھ نہیں جائیں گی،نوازشریف کے بیرون ملک علاج کےلئے ای سی ایل سے نام نکالنے کی درخواست پر شیخ رشید نے ردعمل دیتے ہوئے کہاشہباز شریف بھی نوازشریف ہمراہ ہوں گے تاہم مریم نواز والد کے ساتھ نہیں جائیں گی،شیخ رشید نے کہا نوازشریف اور آصف زرداری کوفضل الرحمن کی دعائیں لگی ہیں جبکہ نوازشریف کی درخواست کونیب کلیئرکرےگااس سے قبل سابق وزیراعظم نواز شریف کا نام ای سی ایل سے نکالنے کےلئے وزارت داخلہ میں درخواست جمع کرائی گئی ، درخواست بیماری اور ملک سے باہرعلاج کرانے کی بنیاد پر دی گئی ، درخواست میں شہبازشریف نے موقف اپنایانواز شریف علاج کےلئے ملک سے باہر جانا چاہتے ہیں،ذرائع وزارت داخلہ کے مطابق شہباز شریف کی جانب سے جمع کرائی گئی درخواست سیکرٹری داخلہ کو موصول ہوگئی جس کے بعد وزارت داخلہ حکام درخواست کا قانونی پہلوو¿ں سے جائزہ لے رہے ہیں،وزارت داخلہ نے کہاشہبازشریف کی جانب سے نواز شریف کا نام صحت کی ناسازی اور بیرون ملک علاج کی بنیاد پر ای سی ایل سے نکالنے کی درخواست موصول ہوئی، وزارت داخلہ نے معاملہ نیب کو ریفر کردیا، شریف خاندان کی جانب سے نیب کو بھی درخواست کی گئی ہے، شریف میڈیکل سٹی لاہور سے نواز شریف کی صحت کی رپورٹ طلب کر کے میڈیکل بورڈ سے موقف حاصل کیاجائےگا،درخواست کی حساس نویت کو مدنظر رکھتے ہوئے وزارت داخلہ کی جانب سے تمام ضروری اقدامات بر وقت کیے گئے ،وزارت داخلہ اپنی سفارش تمام حقائق اور متعلقین کے موقف سامنے رکھ کر مجاز اتھارٹی کے سامنے رکھے گی،دوسری جانب حکومت کی جانب سے نوازشریف کا نام ای سی ایل سے نکالنے کا فیصلہ سامنے آنے کے بعدنوازشریف علاج کےلئے اتوار کولندن جائیں گے،شہبازشریف بھی نوازشریف کےساتھ ہوں گے،ڈاکٹرعدنان اورجنیدصفدربھی نوازشریف کےساتھ جائیں گے ،پاسپورٹ عدالت میں جمع ہونے کے باعث مریم نواز کی فوری نوازشریف کےساتھ روانگی ممکن نہیںجبکہ نوازشریف کو کمرشل یا خصوصی طیارے سے لےجانے پر مشاورت کی جارہی ہے،اسحاق ڈار نے نوازشریف کے علاج کیلئے لندن میں انتظامات مکمل کرلئے ، لندن کے ہارلے سٹریٹ کلینک میں ڈاکٹرز کا پینل بھی تشکیل دیدیا گیا ، نواز شریف کا لندن پہنچتے ہی علاج شروع کر دیا جائےگا،بیماری کی تشخیص کرنے کیلئے پیر کو نوازشریف کے ٹیسٹ کیے جائیں گے،حسن نواز نے لندن میں ڈاکٹرز سے ملاقات کی اور اپنے والد کی تازہ ترین میڈیکل رپورٹس سے آگاہ کیا، دل و گردوں کے ماہرین سے ابتدائی مشاورت بھی مکمل کرلی گئی جبکہ نیویارک کے ڈاکٹروں سے بھی صلح مشورہ شروع کردیا گیا علاوہ ازیںاس حوالے سے شریف خاندان اور(ن) لیگی رہنماو¿ں کا اہم اجلاس ہوا جس میں فیصلہ کیا گیا نوازشریف کا علاج لندن سے کرایا جائے گا،بیرون ملک علاج کےلئے پنجاب حکومت کو بھی آگاہ کیا جائےگا،خاندانی ذرائع کے مطابق مریم نوازکے پاسپورٹ کی واپسی کےلئے درخواست عدالت کے روبرو جمع کرائی جائے گی وہ اپنے والد کی دیکھ بھال کےلئے بیرون ملک ہی قیام کریں گی،ذرائع کے مطابق نواز شریف کے ذاتی معالج ڈاکٹرعدنان نے شریف خاندان کوبریفنگ دیتے ہوئے کہا نوازشریف کی طبیعت سے متعلق رپورٹس ٹھیک نہیں،سابق وزیر اعظم کے پلیٹ لیٹس علاج کے باوجود مستحکم نہیں ہو رہے،دی جانےوالی تھراپی بھی موثر ثابت نہیں ہو رہی،نوازشریف کے پلیٹ لیٹس کی تشخیص نہ ہونے سے مسائل بڑھتے جارہے ہیں،سابق وزیر اعظم کو صحت کی صورتحال کے پیش نظر سپیشلائزڈ کیئر اور جدید علاج کی ضرورت ہے،بیرون ملک جانا چاہیے،والدہ شمیم اختر نے نوازشریف سے کہا بیرون ملک علاج کروایا جائے جبکہ شہبازشریف نے کہا آپ کی صحت کے حوالے سے بہت فکر مند ہیں، علاج کرانا ضروری ہے،مریم نوازنے کہا حکومت نے ہمارے خلاف سب کچھ کرلیا لیکن کچھ ثابت نہ ہوا، کرپشن کیسز بنتے رہے لیکن کرپشن کا ایک روپیہ بھی ثابت نہ کرسکے۔

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Next Post

نوازشریف واقعی بیمار ہیںیہ این آر ا و نہیں،وزیراعظم

جمعہ نومبر 8 , 2019
Share on Facebook Tweet it Share on Google Email اسلام آباد(زاہد احمد خان سے)وزیر اعظم عمران خان نے حکومتی ترجمانوں کو نواز شریف کی بیرون ملک روانگی کے معاملے پر مو¿قف نرم رکھنے کی ہدایت کردی،تفصیلات کے مطابق وزیراعظم نے ترجمانوں کو نواز شریف کی بیرون ملک روانگی پر نرم […]

چیف ایڈیٹر

سید ممتاز احمد

قارئین اور ناظرین کو لمحہ لمحہ باخبر رکھنے کے لئے” مشرق “ویب سائٹ اور” مشرق“ ٹی وی کااجراءکیاگیا ہے۔روزنامہ” مشرق“ کا قیام1962ءمیں عمل میں آیا تھا ۔یہ اخبار پاکستان کی جدید صحافت کے علمبردار آئین کی بالادستی ،جمہوری قدروں کے فروغ اور انسانی حقوق کے تحفظ کاعلم بلند کرنے کے عزم کے ساتھ دنیائے صحافت میں آیا تھا ۔ ”مشرق “نے جدید تقاضوں کے مطابق اپنے قارئین اور دنیا بھر میں پاکستانیوں کو باخبر رکھنے کے لئے ویب سائٹ اور ویب ٹی وی کا جناب سید ممتاز احمد شاہ چیف ایڈیٹر مشرق گروپ آف نیوزپیپرز کی نگرانی میں اجراءکیاہے ۔یہاں یہ امر قابل ذکر ہے کہ اقلیم صحافت کے درخشندہ ستارے سید ممتاز احمد کا شمار پاکستانی صحافت کے اکابرین میں ہوتا ہے۔زندگی بھر قلم وقرطاس اور پرنٹ میڈیا ہی ان کا اوڑھنا بچھونا رہا۔سید ممتاز احمد شاہ نے آج سے 50 برس قبل صحافت جیسی وادی ¿ پرخار میںقدم رکھا۔ضیائی مارشل لا کے دور میں کئی مراحل آئے جب قلم اور قرطاس سے رشتہ برقرار اور استوار رکھنا انتہائی جانگسل ہوچکا تھا لیکن وہ کٹھن اور دشوار گزار راستوں پر سے گزرتے رہے لیکن ان کے پایہ¿ استقلال میں کبھی لغزش دیکھنے سننے میں نہیں آئی۔ واضح رہے کہ سید ممتاز احمد نے ملک کے اہم ترین انگریزی اخبار ”ڈان“ ”جنگ“ ”دی نیوز“ اور روزنامہ ”مشرق“ میں اپنی گراں قدر خدمات انجام دی ہیں۔ اور ان کا مشرق کے ساتھ صحافت کا سفر جاری ہے۔