فیس بک پر گستاخانہ مواد پوسٹ کرنے پر بنگلہ دیش میں ہنگامے

ڈھاکہ (مانیٹرنگ ڈیسک) بنگلہ دیش میں ایک ہندو کی جانب سے توہین رسالت پر مبنی فیس بک پوسٹ کے خلاف کیے جانے والے احتجاجی مظاہرے کے دوران پولیس کی سیدھی فائرنگ سے 4 افراد جاں بحق اور 50 سے زائد زخمی ہوگئے۔ایک ہندو نے فیس بک پر توہین رسالت پر مبنی مواد پوسٹ کیا تھا جس پر اسے گرفتار کرلیا گیا ہے۔ گستاخانہ پوسٹ سامنے آنے پر بنگلہ دیش کے مسلمان بھڑک اٹھے اور انہوں نے برہان الدین ٹاﺅن میں شدید احتجاج کیا۔ 20 ہزار سے زائد مظاہرین نے ملزم کی فی الفور پھانسی کا مطالبہ کیا۔مظاہرے کے دوران پولیس نے لوگوں پر سیدھی فائرنگ کردی جس کی زد میں آکر 4 افراد جاں بحق اور 50 سے زائد زخمی ہوگئے۔ پولیس کا کہنا ہے کہ انہوں نے اپنے دفاع میں فائرنگ کی ہے کیونکہ مظاہرین نے اہلکاروں پر پتھراﺅ شروع کردیا تھا۔پولیس فائرنگ سے جاں بحق افراد کی تعداد میں اضافہ ہوسکتا ہے ، ڈاکٹر طیب الرحمان نے غیر ملکی خبر ایجنسی سے گفتگو کرتے ہوئے بتایا کہ جن زخمیوں کو ہسپتال لایا گیا ہے ان میں سے 43 کی حالت سخت تشویشناک

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Next Post

فضل الرحمان دہشت گرد اعظم اجیت دوول کے ساتھ بیٹھے ،علی محمد خان

پیر اکتوبر 21 , 2019
Share on Facebook Tweet it Share on Google Email اسلام آباد (مانیٹرنگ ڈیسک)وفاقی وزیر علی محمد خان نے کہاہے کہ مولانا فضل الرحمان بھارت کے دہشت گرد اعظم اجیت دوول کے ساتھ بیٹھے ہیں ، تصویر اصلی ہے تو پھر بھی پتہ چل جائے گا اور اگر نقلی ہے تو […]

چیف ایڈیٹر

سید ممتاز احمد

قارئین اور ناظرین کو لمحہ لمحہ باخبر رکھنے کے لئے” مشرق “ویب سائٹ اور” مشرق“ ٹی وی کااجراءکیاگیا ہے۔روزنامہ” مشرق“ کا قیام1962ءمیں عمل میں آیا تھا ۔یہ اخبار پاکستان کی جدید صحافت کے علمبردار آئین کی بالادستی ،جمہوری قدروں کے فروغ اور انسانی حقوق کے تحفظ کاعلم بلند کرنے کے عزم کے ساتھ دنیائے صحافت میں آیا تھا ۔ ”مشرق “نے جدید تقاضوں کے مطابق اپنے قارئین اور دنیا بھر میں پاکستانیوں کو باخبر رکھنے کے لئے ویب سائٹ اور ویب ٹی وی کا جناب سید ممتاز احمد شاہ چیف ایڈیٹر مشرق گروپ آف نیوزپیپرز کی نگرانی میں اجراءکیاہے ۔یہاں یہ امر قابل ذکر ہے کہ اقلیم صحافت کے درخشندہ ستارے سید ممتاز احمد کا شمار پاکستانی صحافت کے اکابرین میں ہوتا ہے۔زندگی بھر قلم وقرطاس اور پرنٹ میڈیا ہی ان کا اوڑھنا بچھونا رہا۔سید ممتاز احمد شاہ نے آج سے 50 برس قبل صحافت جیسی وادی ¿ پرخار میںقدم رکھا۔ضیائی مارشل لا کے دور میں کئی مراحل آئے جب قلم اور قرطاس سے رشتہ برقرار اور استوار رکھنا انتہائی جانگسل ہوچکا تھا لیکن وہ کٹھن اور دشوار گزار راستوں پر سے گزرتے رہے لیکن ان کے پایہ¿ استقلال میں کبھی لغزش دیکھنے سننے میں نہیں آئی۔ واضح رہے کہ سید ممتاز احمد نے ملک کے اہم ترین انگریزی اخبار ”ڈان“ ”جنگ“ ”دی نیوز“ اور روزنامہ ”مشرق“ میں اپنی گراں قدر خدمات انجام دی ہیں۔ اور ان کا مشرق کے ساتھ صحافت کا سفر جاری ہے۔