سابق وزیراعظم نواز شریف کے پی ای ٹی سکین کی رپورٹس آ گئیں

لندن:نواز شریف کے ذاتی معالج ڈاکٹر عدنان نے بتایا ہے کہ پی ای ٹی سکین میں ایک سے زیادہ لیمف نوڈز پائے گئے ہیں۔ رائٹ ایگزیلیری لیمف نوڈز کا مزید معائنہ کیا جا رہا ہے۔

ڈاکٹر عدنان کا میڈیا سے گفتگو میں کہنا تھا کہ مزید ٹیسٹ کے بعد پتا چلے گا کہ لیمف نوڈز کی وجہ کیا ہے؟ انہوں نے بتایا کہ نواز شریف کے پیلیٹ لٹس کسی حد تک نارمل ہیں۔ جنھیں ادویات کے ذریعے خاص لیول پر رکھا جا رہا ہے۔

انہوں نے بتایا کہ نواز شریف کے مرض کی مزید تحقیقات اور ریگولر فالو اپ جاری ہے، جس میں خون کے ٹیسٹ بھی شامل ہیں۔ ڈاکٹر عدنان نے طبی اصلاحات کا استعمال کرتے ہوئے کہا کہ سابق وزیراعظم کے رائٹ ایگزیلا میں نوڈز ہیں جو بڑے ہو چکے ہیں۔

ان کا کہنا تھا کہ لاہور میں نوازشریف کو ہارٹ اٹیک ہوا تھا۔ اس لیے کارڈیالوجی کی ایک ٹیم بھی ان کا معائنہ کر رہی ہے۔ انجیو گرام اور انجیو پلاسٹی کیا جائے گا جبکہ دماغ کو خون منتقل کرنے والی شریان کے علاج کیلئے ویسکولر سرجن کی خدمات لی ہیں۔ ویسکولر سرجن دوبارہ نواز شریف کو معائنہ کریں گے۔ دماغ کی شریان کی سرجری یا سٹنٹ ڈالا جائے گا۔

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Next Post

کانگو: امن مشن کیخلاف شہری سڑکوں پر نکل آئے، فائرنگ سے 6 ہلاک

منگل دسمبر 3 , 2019
Share on Facebook Tweet it Share on Google Email کانگو: افریقی ملک کانگو میں اقوام متحدہ کے دنیا کے سب سے بڑے امن مشن موجود اہلکاروں کیخلاف سینکڑوں افراد سڑکوں پر باہر نکل آئے، سکیورٹی فورسز کی فائرنگ سے 6 شہری ہلاک ہو گئے جبکہ متعدد زخمی ہو گئے ہیں۔ […]

چیف ایڈیٹر

سید ممتاز احمد

قارئین اور ناظرین کو لمحہ لمحہ باخبر رکھنے کے لئے” مشرق “ویب سائٹ اور” مشرق“ ٹی وی کااجراءکیاگیا ہے۔روزنامہ” مشرق“ کا قیام1962ءمیں عمل میں آیا تھا ۔یہ اخبار پاکستان کی جدید صحافت کے علمبردار آئین کی بالادستی ،جمہوری قدروں کے فروغ اور انسانی حقوق کے تحفظ کاعلم بلند کرنے کے عزم کے ساتھ دنیائے صحافت میں آیا تھا ۔ ”مشرق “نے جدید تقاضوں کے مطابق اپنے قارئین اور دنیا بھر میں پاکستانیوں کو باخبر رکھنے کے لئے ویب سائٹ اور ویب ٹی وی کا جناب سید ممتاز احمد شاہ چیف ایڈیٹر مشرق گروپ آف نیوزپیپرز کی نگرانی میں اجراءکیاہے ۔یہاں یہ امر قابل ذکر ہے کہ اقلیم صحافت کے درخشندہ ستارے سید ممتاز احمد کا شمار پاکستانی صحافت کے اکابرین میں ہوتا ہے۔زندگی بھر قلم وقرطاس اور پرنٹ میڈیا ہی ان کا اوڑھنا بچھونا رہا۔سید ممتاز احمد شاہ نے آج سے 50 برس قبل صحافت جیسی وادی ¿ پرخار میںقدم رکھا۔ضیائی مارشل لا کے دور میں کئی مراحل آئے جب قلم اور قرطاس سے رشتہ برقرار اور استوار رکھنا انتہائی جانگسل ہوچکا تھا لیکن وہ کٹھن اور دشوار گزار راستوں پر سے گزرتے رہے لیکن ان کے پایہ¿ استقلال میں کبھی لغزش دیکھنے سننے میں نہیں آئی۔ واضح رہے کہ سید ممتاز احمد نے ملک کے اہم ترین انگریزی اخبار ”ڈان“ ”جنگ“ ”دی نیوز“ اور روزنامہ ”مشرق“ میں اپنی گراں قدر خدمات انجام دی ہیں۔ اور ان کا مشرق کے ساتھ صحافت کا سفر جاری ہے۔