دوسری مرتبہ کے ورلڈ اسنوکر چیمپئین کا استقبال، حکومتی نمائندے غائب

دوسری مرتبہ اسنوکر کے عالمی چیمپئن بننے کا اعزاز حاصل کرنے والے محمد آصف کا وطن واپسی پر شاندار استقبال کیا گیا تاہم ان کے استقبال کے لیے کوئی حکومتی نمائندہ ایئرپورٹ نہیں پہنچا۔

محمد آصف جب وطن واپس پہنچے تو کراچی ایئرپورٹ پر بلیئرڈ اینڈ اسنوکر ایسوسی ایشن (پی بی ایس ایف) کے نمائندوں نے ان کا شاندار استقبال کیا۔

وطن واپسی پر میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے محمد آصف نے کہا کہ یہ پورے پاکستان کی جیت ہے میں یہ ٹرافی کشمیری بھائیوں کے نام کرنا چاہوں گا۔

انہوں نے کہا کہ ہم ہمیشہ یہی کہتے ہیں کہ ہمیں سپورٹ کریں تاکہ کھلاڑیوں کی حوصلہ افزائی ہو، حکومت سے امید کرتا ہوں اب حکومت ہمیں سپورٹ ضرور کرے گی۔

محمد آصف نے کہا کہ اسنوکر فیڈریشن نے مشکل حالات میں بھی ہمیں سپورٹ کیا، حکومت سے درخواست ہے کہ اسنوکر کو بھی سپورٹ کرے۔

خیال رہے کہ 9 نومبر کو ترکی کے شہر اناطولیہ میں کھیلی گئی آئی بی ایس ایف ورلڈ مینز اسنوکر چیمپیئن شپ 2019 کے فائنل میں بھی محمد آصف نے ورلڈ اسنوکر چیمپیئن شپ کا ٹائٹل جیت لیا تھا۔

محمد آصف نے دوسری مرتبہ ورلڈ اسنوکر چیمپیئن شپ کا ٹائٹل اپنے نام کیا جہاں اس سے قبل 2012 میں بھی وہ چیمپیئن بننے کا اعزاز حاصل کر چکے ہیں۔

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Next Post

سیارہ عطارد آج زمین اور سورج کے درمیان سے گزرے گا

پیر نومبر 11 , 2019
Share on Facebook Tweet it Share on Google Email زمین سے سب سے زیادہ فاصلے پر موجود سیارہ عطارد آج شام زمین اور سورج کے درمیان سے گزرے گا۔ ڈائریکٹر اسپیس سائنس اسپارکو غلام مرتضیٰ کا اس حوالے سے کہنا ہے کہ عطارد آج شام ساڑھے 5 بجے زمین اور […]

چیف ایڈیٹر

سید ممتاز احمد

قارئین اور ناظرین کو لمحہ لمحہ باخبر رکھنے کے لئے” مشرق “ویب سائٹ اور” مشرق“ ٹی وی کااجراءکیاگیا ہے۔روزنامہ” مشرق“ کا قیام1962ءمیں عمل میں آیا تھا ۔یہ اخبار پاکستان کی جدید صحافت کے علمبردار آئین کی بالادستی ،جمہوری قدروں کے فروغ اور انسانی حقوق کے تحفظ کاعلم بلند کرنے کے عزم کے ساتھ دنیائے صحافت میں آیا تھا ۔ ”مشرق “نے جدید تقاضوں کے مطابق اپنے قارئین اور دنیا بھر میں پاکستانیوں کو باخبر رکھنے کے لئے ویب سائٹ اور ویب ٹی وی کا جناب سید ممتاز احمد شاہ چیف ایڈیٹر مشرق گروپ آف نیوزپیپرز کی نگرانی میں اجراءکیاہے ۔یہاں یہ امر قابل ذکر ہے کہ اقلیم صحافت کے درخشندہ ستارے سید ممتاز احمد کا شمار پاکستانی صحافت کے اکابرین میں ہوتا ہے۔زندگی بھر قلم وقرطاس اور پرنٹ میڈیا ہی ان کا اوڑھنا بچھونا رہا۔سید ممتاز احمد شاہ نے آج سے 50 برس قبل صحافت جیسی وادی ¿ پرخار میںقدم رکھا۔ضیائی مارشل لا کے دور میں کئی مراحل آئے جب قلم اور قرطاس سے رشتہ برقرار اور استوار رکھنا انتہائی جانگسل ہوچکا تھا لیکن وہ کٹھن اور دشوار گزار راستوں پر سے گزرتے رہے لیکن ان کے پایہ¿ استقلال میں کبھی لغزش دیکھنے سننے میں نہیں آئی۔ واضح رہے کہ سید ممتاز احمد نے ملک کے اہم ترین انگریزی اخبار ”ڈان“ ”جنگ“ ”دی نیوز“ اور روزنامہ ”مشرق“ میں اپنی گراں قدر خدمات انجام دی ہیں۔ اور ان کا مشرق کے ساتھ صحافت کا سفر جاری ہے۔