حکومت نے پرائیویٹ میڈیکل کالجزکےلئے ایک مرتبہ پھر آرڈیننس جاری

اسلام آباد (مشرق نیوز)پاکستان میڈیکل کمیشن آرڈیننس 2019 کے نفاذ سے پرائیویٹ میڈیکل اور ڈینٹل کالجز کو غیرمعمولی اختیار تفویض ہوگئے، جس کے تحت وہ اپنی مرضی سے فیس کا تعین کرسکیں گے۔تفصیلات کے مطابق مذکورہ آرڈیننس کے تحت کالجز اضافی ٹیسٹ مثلاً انٹرویو میں امیدوار کو نمبر یا پوائٹس دے سکیں گے۔علاوہ ازیں نجی میڈیکل کالجز کا جن جامعات سے الحاق ہے وہ ان کی ہدایت پر اساتذہ کی بھرتی بھی کرسکیں گے۔دوسری جانب یہ آرڈیننس سرکاری ہسپتالوں کی نجکاری کے خلاف سراپا احتجاج ڈاکٹروں سے سختی سے نمٹنے کی اجازت بھی دیتا ہے۔ادھر پاکستان مسلم لیگ (ن) کے سینیٹر جاوید عباسی نے آرڈیننس کو دھوکا قرار دیتے ہوئے اعلان کیا کہ وہ ایوان میں آرڈیننس کے خلاف قرارداد لے کر آئیں گے۔انہوں نے دعویٰ کیا کہ آرڈیننس کا نفاذ سپریم کورٹ کے حکم کے منافی ہے۔جاوید عباسی کا کہنا تھا کہ ’چند ماہ قبل سینیٹ نے پی ایم ڈی سی کے سابق آرڈیننس کی منظوری نہیں دی تھی لیکن حکومت نے ایک مرتبہ پھر آرڈیننس جاری کردیا‘۔انہوں نے بتایا کہ ’حکومتی نمائندوں نے انہیں اجلاس میں طلب کرکے اپوزیشن کی حمایت حاصل کرنے کی دعوت دی تھی لیکن میں نے انہیں بتایا کہ وہ بل پیش کریں تاکہ تمام اسٹیک ہولڈرز سے رائے طلب کی جا سکے اور اب حکومت نے آرڈیننس کا اعلان کردیا‘۔علاوہ ازیں وزیراعظم کے معاون خصوصی برائے صحت ڈاکٹر ظفر مرزا نے کہا کہ نیا آرڈیننس وقت کی ضرورت ہے اور طبی تعلیم سے منسلک تمام مسائل کا حل پیش کرتا ہے۔واضح رہے کہ صدر مملک ڈاکٹر عارف علوی کی جانب سے آرڈیننس پردستخط کے ساتھ ہی پاکستان میڈیکل اینڈ ڈینٹل کونسل (پی ایم ڈی سی) تحلیل ہوگئی تھی اور اس کی جگہ پاکستان میڈیکل کمیشن نے لے لی تھی۔اس آرڈیننس کے ساتھ ہی وزارت برائے قومی صحت (این ایچ ایس) نے اسلام آباد کی ضلعی انتظامیہ اور پولیس کی مدد سے پاکستان میڈیکل کونسل کی عمارت کا کنٹرول سنبھال لیا اور کونسل کے رجسٹرار سمیت 220 ملازمین کو برطرف کردیا گیا۔آرڈیننس کی نقول کے مطابق آرڈیننس لانے کا مقصد ملک میں طبی تعلیم کے معیار کو بہتر بنانا ہے۔آرڈیننس کی شق 19 کے مطابق میڈیکل یا ڈینٹل کالج میں داخلے کے لیے تمام امیدوار کو میڈیکل اینڈ ڈینٹل کالج ایڈمیشن ٹیسٹ (ایم ڈی سی اے ٹی) پاس کرنا ہوگا اور یہ ملک بھر میں ایک ٹیسٹ ہوگا۔خیال رہے کہ حکومت نے پاکستان میڈیکل کمیشن آرڈیننس کی منظوری کے تناظر میں پاکستان کے تمام میڈیکل اور ڈینٹل ڈاکٹروں کی لائسنسنگ اور رجسٹریشن سے متعلق انتہائی اہم ریکارڈز اور میڈیکل اور ڈینٹل اداروں کی حفاظت کے لیے فوری ایکشن لیا ہے۔

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Next Post

کرتارپور راہداری: سروس فیس پربھارت کا اتفاق

منگل اکتوبر 22 , 2019
Share on Facebook Tweet it Share on Google Email اسلام آباد: کشمیر کے حوالے سے پاکستان اور بھارت کے مابین پائی جانے والی کشیدگی کے باجود دونوں ممالک سکھ یاتریوں کے لیے ویزا فری کرتار پور راہداری کے انتظام کے حوالے سے معاہدہ کرنے کے لیے تیار ہیں۔مشرق نیوز کے […]

چیف ایڈیٹر

سید ممتاز احمد

قارئین اور ناظرین کو لمحہ لمحہ باخبر رکھنے کے لئے” مشرق “ویب سائٹ اور” مشرق“ ٹی وی کااجراءکیاگیا ہے۔روزنامہ” مشرق“ کا قیام1962ءمیں عمل میں آیا تھا ۔یہ اخبار پاکستان کی جدید صحافت کے علمبردار آئین کی بالادستی ،جمہوری قدروں کے فروغ اور انسانی حقوق کے تحفظ کاعلم بلند کرنے کے عزم کے ساتھ دنیائے صحافت میں آیا تھا ۔ ”مشرق “نے جدید تقاضوں کے مطابق اپنے قارئین اور دنیا بھر میں پاکستانیوں کو باخبر رکھنے کے لئے ویب سائٹ اور ویب ٹی وی کا جناب سید ممتاز احمد شاہ چیف ایڈیٹر مشرق گروپ آف نیوزپیپرز کی نگرانی میں اجراءکیاہے ۔یہاں یہ امر قابل ذکر ہے کہ اقلیم صحافت کے درخشندہ ستارے سید ممتاز احمد کا شمار پاکستانی صحافت کے اکابرین میں ہوتا ہے۔زندگی بھر قلم وقرطاس اور پرنٹ میڈیا ہی ان کا اوڑھنا بچھونا رہا۔سید ممتاز احمد شاہ نے آج سے 50 برس قبل صحافت جیسی وادی ¿ پرخار میںقدم رکھا۔ضیائی مارشل لا کے دور میں کئی مراحل آئے جب قلم اور قرطاس سے رشتہ برقرار اور استوار رکھنا انتہائی جانگسل ہوچکا تھا لیکن وہ کٹھن اور دشوار گزار راستوں پر سے گزرتے رہے لیکن ان کے پایہ¿ استقلال میں کبھی لغزش دیکھنے سننے میں نہیں آئی۔ واضح رہے کہ سید ممتاز احمد نے ملک کے اہم ترین انگریزی اخبار ”ڈان“ ”جنگ“ ”دی نیوز“ اور روزنامہ ”مشرق“ میں اپنی گراں قدر خدمات انجام دی ہیں۔ اور ان کا مشرق کے ساتھ صحافت کا سفر جاری ہے۔