احمد شہزاد اور عمر اکمل سے کافی امیدیں تھیں جس پر وہ پورا نہیں اتر سکے،سابق کپتان شاہد آفریدی

لاہور (سپورٹس ڈیسک )قومی کرکٹ ٹیم کے کپتان شاہد آفریدی بھی سری لنکا سے دوسرے ٹی ٹوینٹی میچ میں شکست پر میدان میں آ گئے ہیں اور ٹیم کی غلطیوں کے ساتھ شاداب خان کو اچھی پرفارمنس کیلئےشاہد خان آفریدی نے یوٹیوب پر ویڈیو پیغام جاری کرتے ہوئے کہا کہ دوسرے ٹی ٹوینٹی کا رزلٹ بہت ہی حیران کن تھا ، میں سری لنکا کی ٹیم کو کریڈٹ دوں گا کہ انہوں نے بہت اچھی کارکردگی دکھائی ، آج کل میچز 75 سے 80 فیصد فیلڈنگ ہی جتواتی ہے ، پاکستان کی جانب سے فیلڈنگ بہت ناقص تھی یا کہہ رلیں کہ زیرو تھی ، جس بلے باز نے سب سے زیادہ سکور کیے اسی نے ہمیں سب سے زیادہ چانس بھی دیئے لیکن ہم نے مواقع گنوا دیئے۔سابق بلے باز کا کہناتھا کہ یہ سب کیلئے حیرت والا نتیجہ اس لیے تھا کیونکہ پاکستان ٹی ٹوینٹی میں ورلڈ نمبر ون ٹیم ہے اور سری لنکا نے اپنے نئے ٹیلنٹ کو پاکستان بھیجا ، سری لنکن ٹیم کیلئے یہ بڑی اچیومنٹ ہے کہ پاکستان میں ان کی کنڈیشن کے حساب سے پاکستان جیسی ٹیم کو میچز ہرانا ایک بڑی بات ہے ، ایک مرتبہ پھر سے بلے باز کارکردگی دکھانے میں کامیاب نہیں ہوئے ، حیرت ہوتی ہے کہ فخر زمان جو کہ سامنے بہت اچھے چھکے مارتاہے ، مجھے سمجھ نہیں آ رہی تھی کہ وہ کیا کھیلنے جارہا تھا ، جو شارٹ اس نے کھیلی۔شاہد آفرید ی کا کہناتھا کہ اس کے علاوہ احمد شہزاد اور عمر اکمل سے کافی امیدیں تھیں جس پر وہ پورا نہیں اتر سکے ، مصباح الحق کیلئے بھی ایسے حالات ہیں جس پر سوالات اٹھ رہے ہیں کہ لے کر آئیں ہیں تو کیا پرفارمنس تھی ، اس لیے میں ہمیشہ سے کہتا رہاہوں کہ یہ مصباح الحق کیلئے بڑا چیلنج ہے ،ہ ماری دعائیں ان کے ساتھ ہیں۔انہوں نے کہا کہ مصباح الحق کو مشکل اور سخت فیصلے لینے پڑیں گے لیکن سخت فیصلوں کیلئے مصباح الحق پاس بینچ پر ٹیلنٹ ہونا چاہیے ، مضبوط کردار کے کھلاڑی ہونے چاہئیں تب جا کر مصباح الحق کھل کر فیصلہ کرے گا ، لیکن بدقسمتی سے ایسا نہیں ہے ،جس کی وجہ میں سمجھتاہوں کہ ہر پلیئر کے پیچھے کوئی نہ کوئی پلیئر بینچ پر ہونا چاہیے تاکہ اسے پتا ہو کہ میرے پیچھے کوئی بیٹھا ہواہے ، پلیئر نہ ہونے کی وجہ سے کھلاڑی ریلیکس ہیں ، کافی عرصہ سے یہ مسئلہ چل رہاہے کہ پیچھے کوئی پلیئر نہیں ہے۔

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Next Post

مسلم لیگ ن مولانا فضل الرحمان کے ساتھ ہے، مریم اورنگ زیب

بدھ اکتوبر 9 , 2019
Share on Facebook Tweet it Share on Google Email لاہور(مانیٹرنگ ڈیسک)مسلم لیگ ن کی ترجمان مریم اورنگ زیب کاکہنا ہے مسلم لیگ ن کی پوزیشن واضح ہے ہم عوام کے ساتھ کھڑے ہیں، مولانا فضل الرحمان نے تاریخ کا اعلان کردیاہے مسلم لیگ ن ان کے ساتھ ہے۔ترجمان مسلم لیگ […]

چیف ایڈیٹر

سید ممتاز احمد

قارئین اور ناظرین کو لمحہ لمحہ باخبر رکھنے کے لئے” مشرق “ویب سائٹ اور” مشرق“ ٹی وی کااجراءکیاگیا ہے۔روزنامہ” مشرق“ کا قیام1962ءمیں عمل میں آیا تھا ۔یہ اخبار پاکستان کی جدید صحافت کے علمبردار آئین کی بالادستی ،جمہوری قدروں کے فروغ اور انسانی حقوق کے تحفظ کاعلم بلند کرنے کے عزم کے ساتھ دنیائے صحافت میں آیا تھا ۔ ”مشرق “نے جدید تقاضوں کے مطابق اپنے قارئین اور دنیا بھر میں پاکستانیوں کو باخبر رکھنے کے لئے ویب سائٹ اور ویب ٹی وی کا جناب سید ممتاز احمد شاہ چیف ایڈیٹر مشرق گروپ آف نیوزپیپرز کی نگرانی میں اجراءکیاہے ۔یہاں یہ امر قابل ذکر ہے کہ اقلیم صحافت کے درخشندہ ستارے سید ممتاز احمد کا شمار پاکستانی صحافت کے اکابرین میں ہوتا ہے۔زندگی بھر قلم وقرطاس اور پرنٹ میڈیا ہی ان کا اوڑھنا بچھونا رہا۔سید ممتاز احمد شاہ نے آج سے 50 برس قبل صحافت جیسی وادی ¿ پرخار میںقدم رکھا۔ضیائی مارشل لا کے دور میں کئی مراحل آئے جب قلم اور قرطاس سے رشتہ برقرار اور استوار رکھنا انتہائی جانگسل ہوچکا تھا لیکن وہ کٹھن اور دشوار گزار راستوں پر سے گزرتے رہے لیکن ان کے پایہ¿ استقلال میں کبھی لغزش دیکھنے سننے میں نہیں آئی۔ واضح رہے کہ سید ممتاز احمد نے ملک کے اہم ترین انگریزی اخبار ”ڈان“ ”جنگ“ ”دی نیوز“ اور روزنامہ ”مشرق“ میں اپنی گراں قدر خدمات انجام دی ہیں۔ اور ان کا مشرق کے ساتھ صحافت کا سفر جاری ہے۔