بھارتی سپریم کورٹ اقلیتوں کا تحفظ کرنے میں ناکام رہی: پاکستان

پاکستان نے بابری مسجد کے حوالے سے بھارتی سپریم کورٹ کے فیصلے پر گہری تشویش کا اظہار کرتے ہوئے کہا ہے  کہ  بھارتی سپریم کورٹ اقلیتوں کے مفادات کا تحفظ کرنے میں ناکام رہی ہے۔

بھارتی سپریم کورٹ نے بابری مسجد کیس کا فیصلہ سناتے ہوئے مسجد کی زمین ہندوؤں کے حوالے کرتے ہوئے وہاں پر مندر تعمیر کرنے کا حکم دیا ہے۔

اس فیصلے پر ردعمل میں ترجمان دفتر خارجہ نے کہا کہ فیصلے سے ایک بار پھر انصاف کا تقاضا پورا نہیں ہوا۔

دفتر خارجہ کا کہنا ہے کہ بھارتی سپریم کورٹ کے فیصلے سے بھارت کے نام نہاد سیکولرازم کا چہرہ بے نقاب ہوگیا اور فیصلے سے ظاہر ہوتا ہے کہ بھارت میں اقلیتیں محفوظ نہیں جب کہ اقلیتوں کو اپنے عقائد اور عبادت گاہوں پر تشویش لاحق ہو گئی ہے۔

ترجمان دفتر خارجہ نے تشویش کا اظہار کرتے ہوئے کہا ہے کہ بھارت میں ہندو انتہا پسندانہ سوچ خطے میں امن کے لیے خطرہ ہے اور ہندوتوا نظریہ دیگر اداروں کو متاثر کر رہا ہے۔

بھارت کی عدالت عظمیٰ کی جانب سے یہ فیصلہ ایسے وقت سامنے آیا ہے جب پاکستان کی جانب سے سکھوں کو ان کے اہم مذہبی مقام تک رسائی کے لیے کرتارپور راہدراری کا افتتاح کیا گیا ہے

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Next Post

دعا ہے ایسے مبارک دن زندگی میں بار بار آئیں، وزیراعظم کی عید میلاد النبیﷺ پر قوم کو مبارکباد

اتوار نومبر 10 , 2019
Share on Facebook Tweet it Share on Google Email اسلام آباد: وزیراعظم عمران خان کا کہنا ہے کہ نبی ﷺ کی زندگی اپنے اندر اعلیٰ اخلاق کی ایک دنیا لیے ہوئے ہے۔ آپ ﷺنے اپنے حسن انتظام سے روئے زمین پر ایک مثالی فلاحی ریاست قائم کی۔ ان خیالات کا […]

چیف ایڈیٹر

سید ممتاز احمد

قارئین اور ناظرین کو لمحہ لمحہ باخبر رکھنے کے لئے” مشرق “ویب سائٹ اور” مشرق“ ٹی وی کااجراءکیاگیا ہے۔روزنامہ” مشرق“ کا قیام1962ءمیں عمل میں آیا تھا ۔یہ اخبار پاکستان کی جدید صحافت کے علمبردار آئین کی بالادستی ،جمہوری قدروں کے فروغ اور انسانی حقوق کے تحفظ کاعلم بلند کرنے کے عزم کے ساتھ دنیائے صحافت میں آیا تھا ۔ ”مشرق “نے جدید تقاضوں کے مطابق اپنے قارئین اور دنیا بھر میں پاکستانیوں کو باخبر رکھنے کے لئے ویب سائٹ اور ویب ٹی وی کا جناب سید ممتاز احمد شاہ چیف ایڈیٹر مشرق گروپ آف نیوزپیپرز کی نگرانی میں اجراءکیاہے ۔یہاں یہ امر قابل ذکر ہے کہ اقلیم صحافت کے درخشندہ ستارے سید ممتاز احمد کا شمار پاکستانی صحافت کے اکابرین میں ہوتا ہے۔زندگی بھر قلم وقرطاس اور پرنٹ میڈیا ہی ان کا اوڑھنا بچھونا رہا۔سید ممتاز احمد شاہ نے آج سے 50 برس قبل صحافت جیسی وادی ¿ پرخار میںقدم رکھا۔ضیائی مارشل لا کے دور میں کئی مراحل آئے جب قلم اور قرطاس سے رشتہ برقرار اور استوار رکھنا انتہائی جانگسل ہوچکا تھا لیکن وہ کٹھن اور دشوار گزار راستوں پر سے گزرتے رہے لیکن ان کے پایہ¿ استقلال میں کبھی لغزش دیکھنے سننے میں نہیں آئی۔ واضح رہے کہ سید ممتاز احمد نے ملک کے اہم ترین انگریزی اخبار ”ڈان“ ”جنگ“ ”دی نیوز“ اور روزنامہ ”مشرق“ میں اپنی گراں قدر خدمات انجام دی ہیں۔ اور ان کا مشرق کے ساتھ صحافت کا سفر جاری ہے۔