بلوچستان کا مسئلہ صرف سیاسی انداز سے حل کیا جا سکتا ہے، اختر مینگل

 بلوچستان نیشنل پارٹی (مینگل) کے سربراہ اختر مینگل کا کہنا ہے کہ ہمارے چھ نکات کسی مخصوص علاقے یا قوم کے لیے نہیں بلکہ صوبے میں بسنے والی ہر قوم کے لیے ہیں۔ بلوچستان کا مسئلہ صرف سیاسی انداز سے حل کیا جا سکتا ہے۔

کوئٹہ میں بی این پی (مینگل) کی جانب سے ٹکری شفقت لانگو کی بلوچستان نیشنل پارٹی میں شمولیتی پروگرام منعقد ہوا جس میں پارٹی سربراہ اختر مینگل سمیت پارٹی کے مرکزی قائدین اور کارکنوں کی بڑی تعداد شریک ہوئی۔

تقریب سے خطاب کرتے ہوئے سردار اختر مینگل نے کہا کہ پارٹی میں شامل ہونیوالوں کو مبارکباد پیش کرتا ہوں۔ بلوچستان کے حقوق کو ماضی میں پامال کیا گیا۔ بی این پی صوبے کے حقوق کے لیے ہر طرح سے جدوجہد کرے گی۔

انہوں نے کہا کہ ہمارے 6 نکات صرف بی این پی کے لیے نہیں بلکہ پورے صوبے کے لیے ہیں۔ لاپتا افراد میں اگر کوئی بھی کسی جرم ثابت ہو تو اسے نیشنل ایکشن پلان کے تحت سزا دی جائے لیکن اگر کوئی بے قصور ہے تو اس کے بارے میں اس کے لواحقین کو بتایا جائے۔ 6 نکات میں صوبے کے ساحل وسائل کے حقوق بھی شامل ہیں۔

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Next Post

عالمی ویکسین مہم میں رکاوٹ سے غریب بچوں کی صحت کو خطرہ

بدھ جولائی 17 , 2019
Share on Facebook Tweet it Share on Google Email  لندن: اقوامِ متحدہ کے ماتحت اداروں نے خبردار کیا ہے کہ دنیا کے متنازعہ، غریب ترین اور جنگ زدہ ممالک میں بچوں کی بڑی تعداد ویکسین سے محروم ہے اور یوں ان میں خطرناک بیماریوں میں مبتلا ہونے کے امکانات بڑھ گئے […]

چیف ایڈیٹر

سید ممتاز احمد

قارئین اور ناظرین کو لمحہ لمحہ باخبر رکھنے کے لئے” مشرق “ویب سائٹ اور” مشرق“ ٹی وی کااجراءکیاگیا ہے۔روزنامہ” مشرق“ کا قیام1962ءمیں عمل میں آیا تھا ۔یہ اخبار پاکستان کی جدید صحافت کے علمبردار آئین کی بالادستی ،جمہوری قدروں کے فروغ اور انسانی حقوق کے تحفظ کاعلم بلند کرنے کے عزم کے ساتھ دنیائے صحافت میں آیا تھا ۔ ”مشرق “نے جدید تقاضوں کے مطابق اپنے قارئین اور دنیا بھر میں پاکستانیوں کو باخبر رکھنے کے لئے ویب سائٹ اور ویب ٹی وی کا جناب سید ممتاز احمد شاہ چیف ایڈیٹر مشرق گروپ آف نیوزپیپرز کی نگرانی میں اجراءکیاہے ۔یہاں یہ امر قابل ذکر ہے کہ اقلیم صحافت کے درخشندہ ستارے سید ممتاز احمد کا شمار پاکستانی صحافت کے اکابرین میں ہوتا ہے۔زندگی بھر قلم وقرطاس اور پرنٹ میڈیا ہی ان کا اوڑھنا بچھونا رہا۔سید ممتاز احمد شاہ نے آج سے 50 برس قبل صحافت جیسی وادی ¿ پرخار میںقدم رکھا۔ضیائی مارشل لا کے دور میں کئی مراحل آئے جب قلم اور قرطاس سے رشتہ برقرار اور استوار رکھنا انتہائی جانگسل ہوچکا تھا لیکن وہ کٹھن اور دشوار گزار راستوں پر سے گزرتے رہے لیکن ان کے پایہ¿ استقلال میں کبھی لغزش دیکھنے سننے میں نہیں آئی۔ واضح رہے کہ سید ممتاز احمد نے ملک کے اہم ترین انگریزی اخبار ”ڈان“ ”جنگ“ ”دی نیوز“ اور روزنامہ ”مشرق“ میں اپنی گراں قدر خدمات انجام دی ہیں۔ اور ان کا مشرق کے ساتھ صحافت کا سفر جاری ہے۔