بجلی صارفین پر 63 ارب 36 کروڑ روپے سے زائد کا بوجھ ڈالنے کی تیاری

اسلام آباد: سینٹرل پاور پرچیزنگ ایجنسی (سی پی پی اے) کی جنوری سے جون کے بقایا جات کی وصولیوں کیلئے درخواست جمع، صارفین سے بقایا جات وصولی سے ٹیرف میں فی یونٹ 70 پیسے اضافہ متوقع جبکہ ایک سال میں وصولی کی صورت میں ٹیرف میں 45 پیسے فی یونٹ اضافے کا امکان ہے۔

تفصیلات کے مطابق حکومت نے بجلی صارفین پر 63 ارب 36 کروڑ روپے سے زائد کا بوجھ ڈالنے کی تیار کر لی ہے۔ وصولیاں دو سہ ماہیوں کے بقایا جات کی مد میں کی جائیں گی۔

سی پی پی اے کی جانب سے جنوری سے جون 2019ء کے بقایا جات کی وصولیوں کیلئے درخواست جمع کرا دی گئی ہے۔ درخواست پر نیپرا 25 ستمبر کو سماعت کرے گا۔

درخواست میں دو سہ ماہی ایڈجسٹمنٹس کی مد میں 30 ارب 26 کروڑ روپے سے زائد جبکہ آئیسکو، لیسکو اور فیسکو کی ایڈجسٹمنٹ کی مد میں 33 ارب 14 کروڑ روپے وصولی کی تجویز دی گئی ہے۔

دستاویز کے مطابق آئیسکو صارفین سے 3 ارب 40 کروڑ، لیسکو صارفین سے 11 ارب 35 کروڑ، گیپکو صارفین سے 1 ارب 35 کروڑ اور میپکو صارفین کی جیبوں سے 5 ارب 54 کروڑ روپے نکالنے تیاری کر لی گئی ہے۔

اس کے علاوہ پیسکو 6 ارب 44 کروڑ، حیسکو 1 ارب، کیسکو صارفین پر 10 ارب 30 کروڑ روپے اور سیپکو صارفین کی جیبوں سے ایک ارب 30 کروڑ روپے نکالنے کی تیاریاں ہیں۔

دستاویز کے مطابق زائد وصولیاں ہونے پر فیسکو صارفین کو 6 ارب 92 کروڑ روپے لوٹائے جائیں گے جبکہ ٹیسکو صارفین کو بھی 3 ارب 70 کروڑ روپے واپس کرنے کی تجویز ہے۔

صارفین سے بقایا جات وصولی سے ٹیرف میں فی یونٹ 70 پیسے اضافہ متوقع ہے جبکہ ایک سال میں وصولی کرنے کی صورت میں ٹیرف میں 45 پیسے فی یونٹ اضافے کا امکان ہے۔

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Next Post

ملک میں پہلی بار حکمرانوں کے بجائے قومی خزانے کی آمدنی بڑھ رہی ہے، فردوس عاشق

پیر ستمبر 16 , 2019
Share on Facebook Tweet it Share on Google Email  اسلام آباد: معاون خصوصی برائے اطلاعات و نشریات ڈاکٹر فردوس عاشق اعوان کا کہنا ہے کہ ملک میں پہلی بار حکمرانوں کے بجائے قومی خزانے کی آمدنی بڑھ رہی ہے۔ اپنی ٹوئٹ میں فردوس عاشق اعوان کا کہنا تھا کہ حکومت نے […]

چیف ایڈیٹر

سید ممتاز احمد

قارئین اور ناظرین کو لمحہ لمحہ باخبر رکھنے کے لئے” مشرق “ویب سائٹ اور” مشرق“ ٹی وی کااجراءکیاگیا ہے۔روزنامہ” مشرق“ کا قیام1962ءمیں عمل میں آیا تھا ۔یہ اخبار پاکستان کی جدید صحافت کے علمبردار آئین کی بالادستی ،جمہوری قدروں کے فروغ اور انسانی حقوق کے تحفظ کاعلم بلند کرنے کے عزم کے ساتھ دنیائے صحافت میں آیا تھا ۔ ”مشرق “نے جدید تقاضوں کے مطابق اپنے قارئین اور دنیا بھر میں پاکستانیوں کو باخبر رکھنے کے لئے ویب سائٹ اور ویب ٹی وی کا جناب سید ممتاز احمد شاہ چیف ایڈیٹر مشرق گروپ آف نیوزپیپرز کی نگرانی میں اجراءکیاہے ۔یہاں یہ امر قابل ذکر ہے کہ اقلیم صحافت کے درخشندہ ستارے سید ممتاز احمد کا شمار پاکستانی صحافت کے اکابرین میں ہوتا ہے۔زندگی بھر قلم وقرطاس اور پرنٹ میڈیا ہی ان کا اوڑھنا بچھونا رہا۔سید ممتاز احمد شاہ نے آج سے 50 برس قبل صحافت جیسی وادی ¿ پرخار میںقدم رکھا۔ضیائی مارشل لا کے دور میں کئی مراحل آئے جب قلم اور قرطاس سے رشتہ برقرار اور استوار رکھنا انتہائی جانگسل ہوچکا تھا لیکن وہ کٹھن اور دشوار گزار راستوں پر سے گزرتے رہے لیکن ان کے پایہ¿ استقلال میں کبھی لغزش دیکھنے سننے میں نہیں آئی۔ واضح رہے کہ سید ممتاز احمد نے ملک کے اہم ترین انگریزی اخبار ”ڈان“ ”جنگ“ ”دی نیوز“ اور روزنامہ ”مشرق“ میں اپنی گراں قدر خدمات انجام دی ہیں۔ اور ان کا مشرق کے ساتھ صحافت کا سفر جاری ہے۔