بابری مسجد کیس کے فیصلے سے ہمیں نئی شروعات کا موقع ملا ہے، نریندر مودی

بھارتی وزیر اعظم نریندر مودی کا کہنا ہے کہ سپریم کورٹ کا بابری مسجد کیس پر سنائے گئے فیصلے سے سب مطمئن ہیں اور فیصلہ متفقہ طور پر آیا ہے۔

بھارتی اخبار ‘دی ہندو’ کی رپورٹ کے مطابق نریندر مودی نے قوم سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ ‘آج سپریم کورٹ نے ایسے معاملے پر فیصلہ سنایا جس کی دہائیوں پرانی تاریخ تھی’۔

ان کا کہنا تھا کہ ‘پورا ملک چاہتا تھا کہ مقدمے کی سماعت روزانہ کی بنیاد پر ہو اور ایسا ہی ہوا، تاہم یہ معاملہ اب اپنے اختتام کو پہنچ چکا ہے’۔

انہوں نے کہا کہ ‘پوری دنیا جانتی ہے کہ بھارت دنیا کا سب سے بڑا جمہوری ملک ہے اور آج یہ بھی ثابت ہوگیا کہ یہ بھرپور صلاحیت کا حامل اور مضبوط ملک ہے’۔

نریندر مودی نے دعویٰ کیا کہ ‘جس طرح سے ہر طبقے کے لوگوں نے اس فیصلے کو کھلے دل سے قبول کیا ہے، اس سے اتحاد کا مظاہرہ ہوتا ہے’۔

انہوں نے کہا کہ ‘سپریم کورٹ نے انتہائی تحمل سے سب کی بات سنی اور سب کو مطمئن کرنے کے لیے متفقہ طور پر فیصلہ سنایا ہے اور اس کے لیے ججز، عدلیہ اور عدالتی نظام کی جتنی تعریف کی جائے کم ہے’۔

ان کا کہنا تھا کہ ‘9 نومبر ہی کو برلن کی دیوار گری تھی اور 2 حریف نظریات آپس میں ملے تھے اور آج ہی کرتار پور صاحب راہداری کا افتتاح بھی ہوا’۔

بھارتی وزیر اعظم کا کہنا تھا کہ ‘سپریم کورٹ نے ہمیں یہ بھی پیغام دیا ہے کہ مشکل ترین امور کا حل آئین اور قانون کے اندر موجود ہے، بھلے اس کے لیے وقت درکار ہو’۔

ان کا کہنا تھا کہ ‘فیصلے سے ہمیں ایک نئی شروعات کا موقع ملا ہے، اس تنازع سے کئی نسلیں متاثر ہوئی ہیں تاہم ہمیں اس کو حل کرکے نئے بھارت کا آغاز کرنا چاہیے’۔

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Next Post

یمن میں بارودی سرنگ دھماکے میں 9 سالہ بچہ جاں بحق، 2 زخمی

اتوار نومبر 10 , 2019
Share on Facebook Tweet it Share on Google Email v صنعا: جنگ زدہ یمن کے دارالحکومت کے مشرقی علاقے میں بارودی سرنگ پھٹنے سے ایک 9 سالہ بچہ جاں بحق اور اس کی بہن اور بھائی زخمی ہو گئے۔ العربیہ نیوز کے مطابق یمن کے دارالحکومت صنعا کے علاقے ربیع یام […]

چیف ایڈیٹر

سید ممتاز احمد

قارئین اور ناظرین کو لمحہ لمحہ باخبر رکھنے کے لئے” مشرق “ویب سائٹ اور” مشرق“ ٹی وی کااجراءکیاگیا ہے۔روزنامہ” مشرق“ کا قیام1962ءمیں عمل میں آیا تھا ۔یہ اخبار پاکستان کی جدید صحافت کے علمبردار آئین کی بالادستی ،جمہوری قدروں کے فروغ اور انسانی حقوق کے تحفظ کاعلم بلند کرنے کے عزم کے ساتھ دنیائے صحافت میں آیا تھا ۔ ”مشرق “نے جدید تقاضوں کے مطابق اپنے قارئین اور دنیا بھر میں پاکستانیوں کو باخبر رکھنے کے لئے ویب سائٹ اور ویب ٹی وی کا جناب سید ممتاز احمد شاہ چیف ایڈیٹر مشرق گروپ آف نیوزپیپرز کی نگرانی میں اجراءکیاہے ۔یہاں یہ امر قابل ذکر ہے کہ اقلیم صحافت کے درخشندہ ستارے سید ممتاز احمد کا شمار پاکستانی صحافت کے اکابرین میں ہوتا ہے۔زندگی بھر قلم وقرطاس اور پرنٹ میڈیا ہی ان کا اوڑھنا بچھونا رہا۔سید ممتاز احمد شاہ نے آج سے 50 برس قبل صحافت جیسی وادی ¿ پرخار میںقدم رکھا۔ضیائی مارشل لا کے دور میں کئی مراحل آئے جب قلم اور قرطاس سے رشتہ برقرار اور استوار رکھنا انتہائی جانگسل ہوچکا تھا لیکن وہ کٹھن اور دشوار گزار راستوں پر سے گزرتے رہے لیکن ان کے پایہ¿ استقلال میں کبھی لغزش دیکھنے سننے میں نہیں آئی۔ واضح رہے کہ سید ممتاز احمد نے ملک کے اہم ترین انگریزی اخبار ”ڈان“ ”جنگ“ ”دی نیوز“ اور روزنامہ ”مشرق“ میں اپنی گراں قدر خدمات انجام دی ہیں۔ اور ان کا مشرق کے ساتھ صحافت کا سفر جاری ہے۔