ایران کیساتھ جنگ نہیں چاہتے لیکن دفاع کیلئے ہر پل تیار ہیں: شاہ سلمان

ریاض: سعودی عرب کے فرمانروا شاہ سلمان کا کہنا ہے کہ ریاض تہران کے ساتھ جنگ نہیں چاہتا مگر اپنے دفاع کرنے کے لئے ہر پل تیار ہے۔

شوریٰ کونسل سے خطاب کرتے ہوئے ان کا کہنا تھا کہ عالمی برداری ایران کے میزائل اور ایٹمی پروگرام کو روکنے میں کردار ادا کرے، اپنا دفاع کے لئے انتہائی اقدام اٹھانے میں ایک لمحہ کی تاخیر نہیں کی جائے گی۔

x

شاہ سلمان کا کہنا تھا کہ سعودی تیل تنصیبات پر حملے میں ایرانی اسلحہ استعمال ہوا، عالمی برادری ایران کے ایٹمی اور میزائل پروگرام کوروکنے میں کردار ادا کرے۔

سعودی فرمانروا نے آرامکو کے حکام کی بھی تعریف کرتے ہوئے کہا کہ حملے کے بعد ارامکو نے تیل کی سپلائی کو مختصر وقت میں دوبارہ بحال کر کے دنیا کو پیغام دیا کہ سعودی عرب تیل کی عالمی طلب کو پورا کرنے کی صلاحیت رکھتا ہے۔ 

خادم حرمین شریفین نے کہا کہ سعودی عرب نئے قومی اہداف حاصل کرنے کے لیے اپنے اقتصادی ڈھانچے میں تنوع پیدا کرنے کے سلسلے میں پرعزم ہے۔ ہمارے شہری ہمارا بنیادی ہدف اور امیدوں کا مرکز ہیں۔ افرادی قوت کو فروغ دینے کے سلسلے میں کافی کام کر لیے ہیں۔ وطن عزیز کے لڑکوں اور لڑکیوں کو سعودی لیبر مارکیٹ کے لیے بڑی حد تک تیار کر لیا گیا ہے۔

شاہ سلمان نے خواتین سے متعلق قومی پالیسی کا تذکرہ کرتے ہوئے کہا کہ سعودی عرب خواتین کو اپنے قدموں پر کھڑا کرنے کا مشن جاری رکھے گا۔ وطن عزیز کی تعمیر و ترقی میں خواتین کی شرکت کا تناسب بڑھاتے رہیں گے۔علاوہ ازیں بے روزگاری کی شرح کم کرنے اور سعودی عرب کے مردوں اور خواتین کو روزگار کے زیادہ سے زیادہ مواقع فراہم کرنے کی جدوجہد جاری رکھیں گے۔

شاہ سلمان نے کہا کہ اس حقیقت کا تذکرہ بڑے فخر کے ساتھ کرنا چاہوں گا کہ 2017 میں سعودی خواتین 19.4فیصد میدان عمل میں تھیں۔ 2019 میں ان کا تناسب بڑھ کر 23.2 فیصد ہوگیا ہے۔

شاہ سلمان نے مزید کہا کہ سال رواں کی دوسری سہ ماہی کے دوران تیل کے ماسوا قومی آمدنی کی شرح نمو 3 فیصد ہوگئی ہے۔ 2018 کی دوسری سہ ماہی میں یہ شرح نمو 2.5 فیصد تھی۔ اعدادوشمار بتا رہے ہیں کہ تیل کے ماسوا ذرائع سے آمدنی کی شرح 15فیصد تک پہنچ گئی ہے۔

شاہ سلمان نے سعودی مارکیٹ میں آرامکو کے حصص کے حوالے سے کہا کہ سال رواں کے دوران اداروں کی تعداد میں 13 فیصد کا اضافہ ہوا ہے۔

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Next Post

بھارت نے ہزاروں کشمیریوں کی گرفتاری کا اعتراف کر لیا

جمعرات نومبر 21 , 2019
Share on Facebook Tweet it Share on Google Email سرینگر:جنت نظیر وادی کو بھارت نے دنیا کی سب سے بڑی جیل بنا دیا۔ 109 روز سے جاری کرفیو اور لاک ڈاؤن کے دوران بھارتی درندے کشمیری بچوں کو اٹھا کر لے جاتے ہیں۔ ہزاروں افراد کی گرفتاری کا بھارت نے […]

چیف ایڈیٹر

سید ممتاز احمد

قارئین اور ناظرین کو لمحہ لمحہ باخبر رکھنے کے لئے” مشرق “ویب سائٹ اور” مشرق“ ٹی وی کااجراءکیاگیا ہے۔روزنامہ” مشرق“ کا قیام1962ءمیں عمل میں آیا تھا ۔یہ اخبار پاکستان کی جدید صحافت کے علمبردار آئین کی بالادستی ،جمہوری قدروں کے فروغ اور انسانی حقوق کے تحفظ کاعلم بلند کرنے کے عزم کے ساتھ دنیائے صحافت میں آیا تھا ۔ ”مشرق “نے جدید تقاضوں کے مطابق اپنے قارئین اور دنیا بھر میں پاکستانیوں کو باخبر رکھنے کے لئے ویب سائٹ اور ویب ٹی وی کا جناب سید ممتاز احمد شاہ چیف ایڈیٹر مشرق گروپ آف نیوزپیپرز کی نگرانی میں اجراءکیاہے ۔یہاں یہ امر قابل ذکر ہے کہ اقلیم صحافت کے درخشندہ ستارے سید ممتاز احمد کا شمار پاکستانی صحافت کے اکابرین میں ہوتا ہے۔زندگی بھر قلم وقرطاس اور پرنٹ میڈیا ہی ان کا اوڑھنا بچھونا رہا۔سید ممتاز احمد شاہ نے آج سے 50 برس قبل صحافت جیسی وادی ¿ پرخار میںقدم رکھا۔ضیائی مارشل لا کے دور میں کئی مراحل آئے جب قلم اور قرطاس سے رشتہ برقرار اور استوار رکھنا انتہائی جانگسل ہوچکا تھا لیکن وہ کٹھن اور دشوار گزار راستوں پر سے گزرتے رہے لیکن ان کے پایہ¿ استقلال میں کبھی لغزش دیکھنے سننے میں نہیں آئی۔ واضح رہے کہ سید ممتاز احمد نے ملک کے اہم ترین انگریزی اخبار ”ڈان“ ”جنگ“ ”دی نیوز“ اور روزنامہ ”مشرق“ میں اپنی گراں قدر خدمات انجام دی ہیں۔ اور ان کا مشرق کے ساتھ صحافت کا سفر جاری ہے۔